جعلی ڈگری والوں کی شامت آگئی،سابق ارکان اسمبلی ہمایوں کرد،خلیفہ عبدالقیوم اورجاوید ترکئی کو سزا، ناصر شاہ کے وارنٹ گرفتاری جبکہ میربادشاہ قیصرانی پر فردجرم عائد کردی گئی۔

جعلی ڈگری والوں کی شامت آگئی،سابق ارکان اسمبلی ہمایوں کرد،خلیفہ عبدالقیوم اورجاوید ترکئی کو سزا، ناصر شاہ کے وارنٹ گرفتاری جبکہ میربادشاہ قیصرانی پر فردجرم عائد کردی گئی۔

سپریم کورٹ کے حکم کے بعد ماتحت عدلیہ میں جعلی ڈگری والوں کے کیسزکی سماعت زوروں پرہے۔ سابق وفاقی وزیر ہمایوں کرد کو سبی کی سیشن کورٹ نے ایک سال قید اور پانچ ہزار روپے جرمانے کی سزا سنادی۔ ہمایوں عزیز کرد این اے دوسو سڑسٹھ کچھی ،جھل مگسی کی نشست سے کامیاب ہوئے تھے۔ ادھر ڈیرہ اسماعیل خان کے ایڈیشنل سیشن جج کے حکم پر سابق رکن صوبائی اسمبلی خلیفہ عبدالقیوم کو تین سال کیلئے جیل بھیج دیا گیا انہیں پانچ ہزار روپے جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا۔ خلیفہ عبدالقیوم دوہزارآٹھ کے انتخابات میں آزاد امیدوارکی حیثیت سے کامیاب ہوئے تھے۔ ادھر دوہری شہریت کیس میں صوابی کی عدالت نےایم پی اے انجینئیرجاوید اقبال ترکئی کو سزا سنائی۔ انہیں بھی ایک سال قید کاٹناہوگی جبکہ پانچ ہزار روپےجرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا۔ دوسری جانب ڈیرہ غازی خان کی عدالت نے سابق ایم پی اے میر بادشاہ قیصرانی پر فرد جرم عائد کردی ہے جبکہ سابق ارکان قومی اسمبلی ناصر شاہ اور مولوی روزی دین کے جعلی ڈگری کیس میں وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں۔۔ سابق ایم این اے جمشید دستی پر فرد جرم عائدہونے کے بعد کیس کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی۔