امیدواروں کی سکرونٹی شروع : نواز‘ شہبازشریف‘ عمران بھی طلب‘ مشرف‘ عذرا پیچوہو کے کاغذات پر اعتراض

امیدواروں کی سکرونٹی شروع : نواز‘ شہبازشریف‘ عمران بھی طلب‘ مشرف‘ عذرا پیچوہو کے کاغذات پر اعتراض

لاہور + اسلام آباد (خبر نگار + اپنے نامہ نگار سے + نوائے وقت رپورٹ + وقت نیوز + ایجنسیاں) الیکشن کمشن نے ملک بھر سے 9 ہزار سے زائد موصول ہونے والے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال شروع کر دی اور امیدواروں کی سکروٹنی کا عمل شروع ہو گیا ہے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے سربراہ نواز شریف، محمد شہباز شریف اور تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو بھی کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے لئے طلب کر لیا گیا جبکہ سابق صدر پرویز مشرف کے این اے 250 کراچی کی نشست پر جمع کرائے گئے کاغذات نامزدگی کے خلاف اعتراض کی درخواست ریٹرننگ افسر کے پاس جمع کرا دی گئی ہے جبکہ نوابشاہ میں این اے 213 سے پیپلز پارٹی کی امیدوار ڈاکٹر عذرافضل پیچوہو کے کاغذات نامزدگی پر بھی اعتراض کر دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کاغذات کی جانچ پڑتال کا سلسلہ سات اپریل تک جاری رہے گا۔ کاغذات جمع کرانے کیلئے اتوار رات بارہ بجے تک توسیع کر دی گئی تھی۔ الیکشن کمشن کے مطابق ملک بھر سے 12 ہزار 890 کاغذات نامزدگی موصول ہو گئے ہیں جن میں سے 4 ہزار 864 کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال مکمل کر لی گئی ہے۔ ادھر ریٹرننگ افسر نے مسلم لیگ ن کے سربراہ نواز شریف کو حلقہ 119 اور 120 سے کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کے لئے 3 اور 4 اپریل، محمد شہباز شریف کو حلقہ این اے 129 اور پی پی 159، 61 سے کاغذات کی جانچ پڑتال کے لئے تین اور چار اپریل جبکہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو حلقہ این اے 122 اور 126 سے کاغذات کی پڑتال کے لئے پانچ اپریل کو طلب کیا ہے۔ الیکشن کمشن کے مطابق نادرا نے 9 ہزار 86، ایف بی آر نے 5 ہزار 981 کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال مکمل کر لی۔ سندھ سے قومی اسمبلی کے لئے 429 کاغذات نامزدگی موصول ہوئے۔ سندھ سے صوبائی اسمبلی کے لئے 634 کاغذات نامزدگی موصول ہوئے۔ بلوچستان سے قومی اسمبلی کے لئے 178 اور صوبائی اسمبلی کے لئے 385 کاغذات موصول ہوئے۔ پنجاب سے قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلی کی نشستوں کے لئے 13692 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جن م یں خواجہ سرا بھی شامل ہیں۔ خیبر پی کے سے قومی اسمبلی کے لئے ایک ہزار 84 جبکہ صوبائی اسمبلی کے ایک ہزار 787 کاغذات نامزدگی ملے۔ اقلیتوں کی نشستوں پر 106 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ ادھر الیکشن کمشن نے 500 امیدواروں کے کاغذات نامزدگی ویب سائٹ پر جاری کر دئیے ہیں۔ الیکشن کمشن نے پرویز الٰہی کے کاغذات نامزدگی کی تفصیلات ویب سائٹ پر جاری کر دی ہیں۔ این اے ایک سو پانچ سے چودھری احمد سعید نے چودھری پرویز الٰہی کے مقابلے میں کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ جانچ پڑتال کے لئے ریٹرننگ افسروں نے امیدواروں سے یوٹیلٹی بل، نیشنل ٹیکس نمبر کی اصل کاپیاں طلب کر لیں۔ جانچ پڑتال کے لئے امیدواروں کو آئین کے آرٹیکل 62 اور 63 پر پرکھا جائے گا۔ ادھر الیکشن کمشن نے جعلی ڈگری رکھنے والے 54 سابق ارکان کے نام ویب سائٹ پر جاری کر دئیے۔ دریں اثناءسابق صدر پرویز مشرف کے کاغذات نامزدگی کے خلاف اعتراض کی درخواست اختیار علی چنا ایڈووکیٹ نے این اے 250 کے ریٹرننگ افسر کے پاس جمع کرائی۔ درخواست میں م¶قف اختیار کیا گیا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف آرٹیکل 62 اور 63 پر پورا نہیں اترتے ان کے خلاف بےنظیر بھٹو قتل کیس، اکبر بگٹی قتل کیس اور ججز کی غیر قانونی برطرفی کے کیس عدالت میں زیر سماعت ہیں جس کے باعث وہ انتخابات میں حصہ لینے کے اہل نہیں ہیں۔ ادھر نوابشاہ میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 213 سے پیپلز پارٹی کی امیدوار ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو کے کاغذات نامزدگی پر اعتراض کر دیا گیا، ریٹرننگ افسر نے 5 اپریل تک جواب داخل کرنے کی ہدایت کر دی۔ پیپلز پارٹی شہید بھٹو سے تعلق رکھنے والے علی گل کیریو نے ریٹرننگ افسر کے دفتر میں اعتراض داخل کیا ہے کہ این اے 213 سے پیپلز پارٹی کی امیدوار ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے انتخابات کے اعلان کے بعد قواعد و ضوابط کی خلاف ورزی کی۔ انہوں نے ڈپٹی کمشنر رشید زرداری کے ساتھ مل کر انتخابات پر اثرانداز ہونے کیلئے سی این جی رکشے تقسیم کئے۔ ریٹرننگ افسر نے عذرا پیچوہو کو عدالت طلب کر کے اعتراضات سے آگاہ کیا اور 5 اپریل تک جواب داخل کرنے کی ہدایت کی ہے۔ علاوہ ازیں الیکشن کمشن نے پاک فوج سے دو ہیلی کاپٹر مانگ لئے۔ جی ایچ کیو کو دو ہیلی کاپٹرز کے لئے خط لکھ دیا گیا۔ انتخابی فہرستیں اور بیلٹ پیپر بذریعہ ہیلی کاپٹر یا سی 130 طیارے کے ذریعے بلوچستان پہنچائے جائیں گے۔ ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمشن کے مطابق جی ایچ کیو کو خط میں کہا گیا ہے کہ بلوچستان کے دور دراز علاقوں میں بیلٹ پیپرز اور انتخابی فہرستیں پہنچانے کے لئے ہیلی کاپٹر چاہئیں۔ علاوہ ازیں پنجاب سے قومی ا سمبلی کی 148 نشستوں کے لئے کل 4039 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں جن میں 3901 مرد امیدوار، 126 خواتین امیدوار، 11 غیر مسلم اور ایک خواجہ سرا ہے۔ اسلام آباد سے قومی اسمبلی کی 2 نشستوں کے لئے 148 مرد امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ اس طرح 150 نشستوں کے لئے 4049 مرد امیدواروں، 126 خواتین امیدواروں، 11 غیر مسلم امیدواروں اور ایک خواجہ سرا نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ صوبائی اسمبلی پنجاب کی نشستوں کے لئے 9265 مرد امیدواروں، 220 خواتین امیدواروں، 79 غیر مسلم امیدواروں اور ایک خواجہ سرا نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ پنجاب سے خواتین اور اقلیتوں کی 111 مخصوص نشستوں کے لئے 1103 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ پنجاب سے صوبائی اسمبلی کی خواتین کی 66 مخصوص نشستوں کے لئے 640، قومی اسمبلی کی 35 نشستوں کے لئے 261 اور اقلیتوں کی 10 نشستوں کے لئے 202 امیدواروں نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں مگر ان امیدواروں میں سے ان تمام کے نام مسترد ہو جائیں گے جن کے نام سیاسی جماعتوں کی بھجوائی گئی فہرستوں میں شامل نہیں ہیں۔ علاوہ ازیں سابق وزیر خارجہ حنا ربانی کھر کے کاغذات نامزدگی الیکشن کمشن کی ویب سائٹ پر جاری کر دئیے گئے۔ حنا ربانی کھر نے رواں سال ایک لاکھ 45 ہزار 142 روپے انکم ٹیکس دیا۔ حنا ربانی کھر نے 7 ہزار 500 روپے زرعی ٹیکس بھی دیا۔ حنا ربانی کھر کے کل اثاثے ایک کروڑ 33 لاکھ 73 ہزار روپے ہیں۔ دریں اثناءجمشید دستی کے کاغذات نامزدگی بھی الیکشن کمشن کی ویب سائٹ پر جاری کر دئیے گئے۔ جمشید دستی نے کاغذات نامزدگی میں تعلیمی قابلیت میٹرک اور پیشہ مزدوری بتایا۔ جمشید دستی کے کاغذات نامادگی میں ڈگری سے متعلق زیر التوا مقدمے کا اعتراف کیا۔ نوابزادہ طلال بگٹی کے کل اثاثوں کی مالیت 25 لاکھ روپے ہے۔