ننکانہ: مطالبات کے حق میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کا چیف ایگزیکٹو کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

ننکانہ صاحب( نمائندہ خصوصی ) لیڈی ہیلتھ ورکروں کا چیف ایگزیکٹو ہیلتھ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ۔ ڈسٹرکٹ بھر کی لیڈی ہیلتھ ورکروں نے مطالبات کے حق میں ڈسٹرکٹ ہسپتال ننکانہ میں چیف ایگزیکٹو ہیلتھ ڈاکٹر افتخار احمد کے خلاف احتجاجی مظاہر ہ کیا ۔ چیف ایگز یکٹو کی علامتی قبر بنائی اس موقع پر انہوںنے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں وزٹ کے دوران سرکاری گاڑیوں کے لیے ملنے والاپٹرول فی کس گاڑی الائونس جوکہ سالانہ 70ہزار ہوتا ہے ہمیں نہیں دیا گیا معلوم ہوا کہ چیف ایگزیکٹو ہیلتھ نے ملازمین کے ساتھ سازباز ہوکر لاکھوں روپے نکال کر خود ہضم کر لیے جب بھی کوئی لیڈی ہیلتھ ورکر ان کے دفتر جاتی ہے توان سے انتہائی ناروے سلوک ہوتا ہے انہوںنے وزیر اعلی پنجاب اور سیکرٹری ہیلتھ سے مطالبہ کیا ہے کہ ہمارے الائونس کی رقم فوری دلوائی جائے ذمہ دار اہلکاروں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے اس موقع پر پیرامیڈیکس الائنس یونین کے صدر اور ممبران نے بھی احتجاج میں حصہ لیا صدر چوہدری محمد شفیق گجر نے کہا کہ یہ احتجاج کل صبح 8بجے کیا جائے گا۔ احتجاج اس وقت تک جاری رہیگا جب تک ہمارے ورکروں کے مطالبات پورے نہیں ہو جاتے چیف ایگزیکٹو کو تبدیل نہیں کیا جاتا کل کے احتجاج میں ضلع بھر کی ہیلتھ ورکرر اور پیرامیڈیکس الائنس کے تمام ملازمین شرکت کریں گے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر محمد افتخار نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ یہ تمام الزامات بے بنیاد ہیں اور میرے خلاف یہ سازش ہے کیونکہ میں نے تمام ملازمین کو وقت کی پابندی اور ڈیوٹی پر حاضر رکھنے کیلئے سخت اقدامات اٹھا رکھے ہیں اس کی وجہ سے ملازمین میرے خلاف پراپیگنڈا کر رہے ہیں ۔