پاکستان میں امن کیلئے طالبان سے مذاکرات ضروری ہیں: مائیکل سیمپل

پاکستان میں امن کیلئے طالبان سے مذاکرات ضروری ہیں: مائیکل سیمپل

ملتان (نمائندہ نوائے وقت) ہارورڈ یونیورسٹی آف امریکہ اور شعبہ سیاسیات کے پروفیسر ڈاکٹر مائیکل سیمپل نے کہا ہے کہ پاکستان اور اس خطہ میں امن کے لئے ضروری ہے کہ طالبان سے مذاکرات کر کے انہیں امن کے قیام کا ذریعہ بنایا جائے۔ زکریا یونیورسٹی اسلامک ریسرچ اور شعبہ سیاسیات کے زیراہتمام اس خطہ میں قیام امن کے موضوع پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اور افغانستان میں امن دنیا کے لئے بہت ضروری ہے اور اسی لئے قطر مذاکرات کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے۔ اس سے پاکستان اور خطہ میں قیام امن کا راستہ ہموار ہو گا اور اس حوالے سے امریکہ اور دیگر عالمی طاقتیں بھی مذاکرات کی حامی ہیں۔ سیمینار سے پروفیسر ڈاکٹر ایاز محمد رانا ڈین فیکلٹی آف سوشل سائنسز نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم جس خطہ میں رہتے ہیں اس میں شروع ہی سے بدامنی رہی ہے اور قیام امن کے لئے عالمی طاقتوں نے کوئی جامع منصوبہ بندی نہیں کی۔ پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب ڈائریکٹر اسلامک ریسرچ سنٹر نے کہا کہ قیام امن کے لئے تعلیمی‘ سیاسی معاشی اصلاحات کی ضرورت ہے۔ سیمینار میں پروفیسر ڈاکٹر حمیرہ دستی‘ پروفیسر ڈاکٹر عذرا اصغر علی‘ ڈاکٹر شفیق بھٹی‘ ڈاکٹر بسم اﷲ خان‘ ڈاکٹر اکرم رانا‘ ڈاکٹر جاوید سلیانہ سمیت طلبہ و طالبات نے شرکت کی۔