کراچی‘ حیدرآباد میں عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا: لیاقت بلوچ

کراچی‘ حیدرآباد میں عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا: لیاقت بلوچ

ملتان (نامہ نگار خصوصی) سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ انتخابات میں فتح اور شکست کی اہمیت ہے لیکن جماعت اسلامی دینی نظریاتی انقلابی اور عوام کی خدمت کرنے والی جماعت ہے ۔ نظریاتی کارکنان انتخاب ہارنے کے باوجود عزم و حوصلہ نہیں ہارتے جو اللہ کی رضا اور مخلوق خدا کی خدمت کا جذبہ رکھتے ہوں ان کے کام کی راہیں کشادہ رہتی ہیں اس لیے ان میں اپنی غلطیوں کے احساس سے حالات اور نتائج پر کچھ کارکنان میں اضطراب ضرورپیدا ہوا ہے لیکن مجموعی طور پر کارکنان مطمئن ہیں کہ انہوں نے وقت اور مال کا ایثار کیا۔ خواتین ، مرد ، نوجوان ، طلبہ اور علما نے بھر پور محنت کی ہے اور انہیں یقین ہے کہ ہم جس راستے پر چل رہے ہیں یہ ہی راستہ ٹھیک اوردنیا و آخرت کی کامیابی کا ذریعہ ہے ۔ کارکنان میں کوئی اضطراب ، بے چینی اور کسی نوعیت کی گھبراہٹ نہیں عوام کا فیصلہ قبول ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے ”دارالسلام“ میں این اے 149 کے” عزم نو ورکرز کنونشن و عشائیہ “سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ پورے ملک میں انتخابات کے خلاف احتجاج کیا جارہاہے ۔ شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کے دعوﺅں کا چہرہ داغ دار ہو گیاہے خصوصاً کراچی اور حیدر آباد میں گن پوائنٹ پر عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ مارا گیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ این اے 250 کی ری پولنگ میں فوج اور سیکورٹی فورسز نے ذمہ داری نبھائی تو بھتہ خور ٹارگٹ کلرز میدان چھوڑ کر بھا گ گئے ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ وفاقی اور صوبائی نئی حکومتوں کے لیے بڑا چیلنج ہے کہ عوام کے جان ، مال اور عزت کا تحفظ کریں ، مہنگائی غربت ، بے روزگاری کا خاتمہ کریں اور بجلی کا بحران ختم کر کے زراعت ، صنعت اور تجارت کا پہیہ جاری کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ابھی میاں صاحب کی حکومت بنی نہیں کہ انہوں نے مسئلہ کشمیر کو نظر انداز کرتے ہوئے بھارت سے دوستی کی باتیں کرنی شروع کردی ہیں جس سے کشمیریوں کو ایک منفی پیغام جا رہا ہے جس پر کشمیریوں کے قائد سید علی گیلانی نے میاں صاحب کو خط لکھا ہے کہ وہ کشمیریوں کی قربانیوں کو نظر انداز نہ کریں آج بھی کشمیری بھارت کے ظلم وجبر کا نشانہ بن رہے ہیں وہ اپنی آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں ۔مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر بھارت سے دوستی کی باتیں کرنا کشمیریوں کے زخموں پر نمک پاشی کرنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مشرف ایک قومی مجرم ہے جس نے مسئلہ کشمیر پر نئے نئے فارمولے پیش کرکے کشمیریوں کو مایوسی کا پیغام دیا ۔ججوں کی تذلیل کی انہیں قید وبند رکھا اور دوبار آئین پاکستان توڑا۔ملک کو امریکی غلامی میں دیا ایسے شخص کو ملک سے فرار کا راستہ دینا آئین وقانون کا مذاق اُڑانا ہے۔انہوں نے کہا کہ میاں صاحب اپنے انتخابی نشان کی لاج رکھتے ہوئے شیر بنیں اورحلف اُٹھاتے ہی ڈرون طیاروں کو گرانے کا حکم جاری کریں۔اس موقع پر امیر جماعت اسلامی ضلع ملتان میاں آصف محمود اخوانی،ڈاکٹر اشرف علی عتیق،عارف محمود سمرا، را¶ ظفر اقبال ‘ جبار مفتی‘ میاں منیر بودلہ ودیگر حفیظ انور‘ عبدالمحسن شاہین، نے بھی خطاب کیا۔