کوئی سامان چوری نہیں کیا، پاکستانی ایٹمی پروگرام خالصتاً اپنا ہے: ڈاکٹر قدیر

 کوئی سامان چوری نہیں کیا، پاکستانی ایٹمی پروگرام خالصتاً اپنا ہے: ڈاکٹر قدیر

ملتان (سپیشل رپورٹر) تحریک تحفظ پاکستان کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے کہا ہے کہ آج ملکی حالات انتہائی نازک صورتحال سے دوچار ہیں۔ پہلے ایٹمی صلاحیت بنا کر ملک کی جغرافیائی سرحدوں کو مضبوط کیا آج سیاسی جماعت بنا کر ملک کی نظریاتی سرحدوں کی حفاظت کر رہا ہوں۔ بھٹو نے میرے خط پر مجھے بلا کر ایٹمی پروگرام شروع کیا جبکہ جنرل ضیاءاور اسحاق خان نے بھی ایٹمی پروگرام کو بھرپور تحفظ دیا۔ آج ہمارے ملک کی بنیادی اساس کو خطرہ لاحق ہے۔ ڈنکے کی چوٹ پر کہتا ہوں کہ پاکستان کا ایٹمی پروگرام خالصتاً اپنا ہے۔ میں نے کوئی بھی ایٹمی سامان چوری نہیں کیا پاکستان میں ہی تیار شدہ ایٹم بم اور میزائل یہیں کا ہے۔ آج اپوزیشن حکمرانوں کے ساتھ ملکر کرپٹ نظام کو تحفظ دے رہی ہے۔ ہمیں لوٹ مار کا یہ نظام بدلنا ہو گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ہائیکورٹ بار کے زیر اہتمام تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی صورتحال کافی نازک ہے۔ میں نے ملک کو 25 سال دئیے اور میزائل اور ایٹم بم بنایا۔ آج ملک کو ٹوٹتے دیکھ کر دکھ ہوتا ہے۔ اس لئے میدان میں آیا ہوں کہ آنے والی نسل یہ نہ کہے کہ ڈاکٹر قدیر زندہ تھے مگر پھر بھی آرام کرتے رہے۔ انہوں نے کہا کہ جب میں یورپ کے مختلف ملکوں میں اعلیٰ نوکریاں کر رہا تھا تو اس وقت بھی ملک کی ”تڑپ“ میں چھٹی پر پاکستان آیا اور پھر یہیں کا ہو کر رہ گیا۔