معذور افراد وسائل کی عدم دستیابی سے عدم تحفظ کا شکار ہیں: آصف اقبال

معذور افراد وسائل کی عدم دستیابی سے عدم تحفظ کا شکار ہیں: آصف اقبال

ملتان (لیڈی رپورٹر) معذور افراد معذوری سے نہیں بلکہ معاشی مسائل‘ وسائل کی عدم دستیابی اور قونی و ملکی سطح پر انکی صلاحیتوں کا اعتراف نہ ہونے سے عدم استحکام کا شکار ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سوسائٹی فار سپیشل پرسنز کے رکن آصف اقبال نے نوائے وقت فورم میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔ یاسر حمید نے کہا کہ حکومت نے 2 فیصد کوٹہ تو نام کا رکھا ہے جبکہ اصل معذور افراد اس کوٹے سے بھی محروم ہیں جبکہ سفارشی لوگوں کو اس کوٹے پر بھرتی کر کے اصل مستحق کو محروم کر دیا جاتا ہے۔ محمد رفیع اور ملک شہزاد نے کہا کہ سینکڑوں نہیں لاکھوں معذور ہنرمند معاشی تنگ دستی کا شکار ہو کر خاندان پر بوجھ بنے ہوئے ہیں۔ حکومت کو چاہیے کہ زیادہ سے زیادہ صنعتیں لگا کر معذور افراد کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے انہیں ملکی ترقی کے دھارے میں شامل کرے جس سے معذور افراد بھیک کی لعنت سے بھی بچے رہیں گے۔ فیصل یوسف اور محمد شہزاد نے کہا کہ دنیا بھر میں معذور افراد کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھایا جا رہا ہے۔ حکومت ہمیں ہماری صلاحیتوں کے مطابق کام دے کر ملکی ترقی کا حصہ بننے میں معاونت کرے۔