وزیر اعلیٰ سے انصاف کیلئے آنیوالی خاتون پر پولیس کا تشدد

ملتان (خبر نگار خصوصی) وزیراعلیٰ پنجاب سے انصاف مانگنے کے لئے آنے والی خاتون مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بن گئی گزشتہ روز سرکٹ ہاؤس ملتان میں میٹرو فیڈر بس سروس کی افتتاحی تقریب میں گلگشت کی رہائشی شازیہ بی بی نے وزیراعلیٰ سے ملنے کی کوشش کی جسے پولیس نے نہ ملنے دیا خاتون نے الزام عائد کیا کہ پولیس اہلکاروںنے وزیراعلیٰ سے ملنے کی کوشش کی جسے پولیس نے نہ ملنے دیا خاتون نے الزام عائد کیا کہ پولیس اہلکاروں نے وزیراعلیٰ سے ملنے سے روکنے کے لئے اسے مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنایا خاتون نے اپنے خاوند خواجہ ہارون پر بھی الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ وہ اسے برائی کے لئے مجبور کرتا ہے میں نے وومن کرائسز سنٹر میں بھی درخواست دی لیکن وہاں پر بھی اس کی شنوائی نہیں ہوئی اس کے علاوہ 68 سالہ عبدالرحمن نامی شخص نے بھی وزیراعلیٰ سے ملنے کی کوشش کی لیکن وہ بھی نہ مل سکے۔