ترقی یافتہ ممالک میں فرد سے زیادہ ادارے اہمیت کے حامل ہوتے ہیں: اختر بلند رانا

ترقی یافتہ ممالک میں فرد سے زیادہ ادارے اہمیت کے حامل ہوتے ہیں: اختر بلند رانا

ملتان (نمائندہ نوائے وقت) کسی بھی ملک کی ترقی کا انحصار ضابطوں‘ قوانین‘ رولز کی پاسداری پر ہوتا ہے۔ دنیا کے ترقی یافتہ ممالک میں فرد سے زیادہ ادارے اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار آڈیٹر جنرل آف پاکستان محمد اختر بلند رانا نے بہاءالدین زکریا یونیورسٹی ملتان کے الفلاح انسٹی ٹیوٹ آف بنکنگ اینڈ فنانس کے زیراہتمام منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج مقابلے کی اس فضا میں گورنمنٹ کے اداروں کی کارکردگی سوالیہ نشان بنی ہوئی ہے جس کی بنیادی وجہ مکمل احتساب کا نظام نہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آڈیٹر جنرل کا دفتر اپنے آئینی فرائض بجا طور پر ادا کر رہا ہے جس کی وجہ سے اداروں میں اب مالی بے ضابطگی کم ہوتی جا رہی ہے اور ادارے ترقی کی طرف گامزن ہیں۔ وائس چانسلر ڈاکٹر خواجہ علقمہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی اداروں کے عملہ و سربراہوں کو اکنامک اور اکا¶نٹنگ سسٹم کے ساتھ پولیٹیکل سسٹم کو بھی سمجھنے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ جب تک تمام ممالک اور تمام سسٹمز میں ہم آہنگی نہ تو ملک کبھی بھی ترقی نہیں کر سکتا۔ ڈائریکٹر الفلاح انسٹی ٹیوٹ آف بنکنگ ڈاکٹر شوکت ملک نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پرائیویٹ ادارے جس تیزی سے ترقی کر رہے ہیں سرکاری اداروں میں سیاسی وابستگی سے بالاتر ہو کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ سیمینار کا اہتمام ایگزیکٹو سوسائٹی الفلاح انسٹی ٹیوٹ کا اہتمام مستنصر اویس‘ ہما علی‘ عمار احمد‘ الیاس‘ غلام پنجتن نے کیا تھا۔ سیمینار میں کنٹرولر ملٹری اکا¶نٹس کمانڈ ملتان ڈاکٹر محمود احمد‘ ڈاکٹر اعجاز احمد‘ حبیب راشد خان‘ ڈاکٹر حکومت علی‘ ڈاکٹر طارق انصاری اور مختلف شعبہ جات کے چیئرمین و ڈین صاحبان کے علاوہ ضلعی وفاقی آڈٹ اکا¶نٹس آفیسر اور طلبہ و طالبات نے شرکت کی۔