بچہ خسرہ میں مبتلا‘ مرکز صحت امیر پور سادات میں ڈاکٹر غائب

بچہ خسرہ میں مبتلا‘ مرکز صحت امیر پور سادات میں ڈاکٹر غائب

کہروڑپکا (خبرنگار) محنت کش حافظ خلیل شاہ کااڑھائی سالہ بیٹا محمد ابراہیم خسرہ کی جان لیوا بیماری کی لپیٹ میںآگیا ۔اس کا بیٹا محمد عمر شاہ اپنے معصوم بھائی کو چیک کرانے کے لئے بنیادی مرکز صحت امیرپور سادات لے گیا جہاں پر ڈیوٹی ڈاکٹر ابو بکر سندھی غائب تھا جبکہ ڈسپنسر جمیل اور چوکیدار محمد جاوید ڈاکٹر بن کر لوگوں کا چیک اپ کر کے ادوایات پرچی پر لکھ کر دے رہے تھے۔دونوں ملازمین نے معصوم بچے کا چیک اپ کیا گولیاں دیں اور تین دن کے بعد دوبارہ چیک کرانے کا مشورہ دیاصحافی اطلاع پر پہنچے تو ڈسپنر محمد جمیل میڈیکل آفیسر کے دفتر میں بیٹھ کر اپنے فرا ئض سر انجام دے رہا تھا جبکہ چوکیدار آنے والے مریضوں کو ٹیکے لگا رہا تھا ڈاکٹر ،لیڈی ہیلتھ وزیٹر میڈیکل ٹیکنیشن اور عملہ غائب تھا اور دو ٹوکریوں میں تھوڑی سے گولیاں ،سیرپ اور مرہم پٹی کا سامان پڑا ہو اتھا ۔عوامی سماجی شہری حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے اصلا ح و احوال کا مطالبہ کیا ہے ۔