فرقہ وارانہ تشدد سے متعلق اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات وزیراعظم کو بھیج دیں: سردار یوسف

ملتان (نیشن رپورٹ) وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے اسلامی نظریاتی کونسل کی تجاویز کے مطابق فرقہ وارانہ تشدد کے قانون پر مبنی ایک سمری منظوری کیلئے وزیراعظم کو ارسال کردی ہے۔ ملتان میں جامعہ خیر المدارس میں قاری حنیف جالندھری کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں فرقہ وارانہ تشدد کی لہر کے مسئلے پر علماء کو اعتماد میں لیا جا رہا ہے۔ دہشت گردی اور فرقہ وارانہ تشدد روکنے کیلئے تمام سٹیک ہولڈر سے مشاورت کے بعد ایک متفقہ پالیسی بنائی جائیگی۔ انہوں نے واشگاف الفاظ میں اعلان کیا کہ ملک میں قرآن و سنت کیخلاف کوئی قانون نہیں بنایا جا سکتا۔ حکومت اور مذہبی رہنما متحد ہو کر پاکستان کے دشمنوں کا مقابلہ کر سکتے ہیں۔ دشمن ملک میں بدامنی پھیلا کر فرقہ وارانہ کشیدگی کو ہوا دے رہا ہے۔ حکومت نے اقلیتوں کو بھرپور تحفظ فراہم کیا ہے۔ حکومت ایک نئی حج پالیسی تیار کر رہی ہے جس میں حج کرنیوالوں کی صرف ایک کٹیگری ہوگی۔ پرائمری لیول پر عربی زبان کی ترقی کیلئے بھی ایک پالیسی تیاری کے مراحل میں ہے۔