تحریک تحفظ ناموس رسالت کا جاوید ہاشمی ‘ عارف علوی‘ شیریں مزاری کیخلاف مظاہرہ

تحریک تحفظ ناموس رسالت کا جاوید ہاشمی ‘ عارف علوی‘ شیریں مزاری کیخلاف مظاہرہ

ملتان (جنرل رپورٹر) تحریک تحفظ ناموس رسالت کی جانب سے تحریک انصاف کے مرکزی صدر جاوید ہاشمی‘ عارف علوی‘ شیریں مزاری کی جانب سے پارلیمنٹ کے فلور پر تحفظ ناموس رسالت کے قانون کے خلاف ہرزہ سرائی پر چوک کچہری میں ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ ہوا جس کی قیادت صاحبزادہ قاری احمد میاں نے کی میاں آصف محمد اخوانی محمد ایوب مغل‘ سید خالد محمود ندیم‘ ڈاکٹر ظاہر خاکوانی ‘ عظیم الحق پیرزادہ سید اطہر حسین بخاری‘ چودھری ذوالفقار علی سندھو ‘ نفیس احمد انصاری‘ محمد یوسف انصاری‘ شیخ طاہر رشید‘ خواجہ عبیدالرحمن‘ ڈاکٹر انیس روحانی سمیت بڑی تعداد نے شرکت کی مقررین نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جاوید ہاشمی اور تحریک انصا ف کے دیگر رہنما¶ں نے آئین کی دفعہ 295-C میں ترمیم کا مطالبہ کرکے توہین رسالت کا ارتکاب کیا ہے پاکستانی قوم سچے عاشق رسول ہیں وہ کسی صورت بھی توہین رسالت ایکٹ میں ترمیم کو برداشت نہیں کرینگے انہوں نے کہا کہ جاوید ہاشمی ہیرو سے زیرو ہو گئے ہیں شرکاءنے عمران خان سے مطالبہ کیا جاوید ہاشمی‘ عارف علوی‘ شیریں مزاری کیخلاف کارروائی نہ کی گئی تو سمجھا جائے گا کہ یہ تحریک انصاف کی پالیسی اور موقف ہے اگر انہوں نے اسمبلی فلور پر اپنا بیان واپس نہ لیا اور قوم سے معافی نہ مانگی تو نہ صرف ملتان کی سڑکوں پرعمران خان کا گھیرا¶ کرینگے بلکہ جہاں بھی جائینگے ان کا گھیرا¶ ہو گا مقررین نے مطالبہ کیا کہ جاوید ہاشمی عارف علوی شیریں مزاری کی پارلیمنٹ کی رکنیت بھی ختم کی جائے اور سپیکر قومی اسمبلی فوری طور پر ان کی نااہلی کیلئے ریفرنس الیکشن کمشن کو بھجوائے یہ ارکان پارلیمنٹ آئین کی دفعہ 63,62 کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے ہیں ۔
تحریک تحفظ ناموس رسالت