کہروڑپکا: محنت کش کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم آزاد‘ بیٹا گرفتار

کہروڑپکا: محنت کش کے قتل میں ملوث مرکزی ملزم آزاد‘ بیٹا گرفتار

کہروڑپکا ( خبر نگار)کہروڑپکا پولیس نے محنت کش کے مرکزی قاتل سے پانچ لاکھ روپے میں ڈیل کر کے مقتول کے بیٹے کو قاتل قرار دے دیا ۔تھانیدارپانچ لاکھ روپے رشوت لے کر مرکزی قاتل کو بچانے کے لئے متحرک ہو گیا ۔مقتول کے معصوم بیٹے کو قاتل قرار دے کر حوالا ت میں بند کر دیا۔ ایس ایچ او نے تفتیش کر کے بھانڈا پھوڑ دیا ۔اصل قاتل مقتول کا داماد نکلا۔ آلہ قتل برآمد ۔قاتل نے عدالت سے قبل از گرفتاری عبوری ضمانت کروا لی ۔عدالت نے آئندہ تاریخ پیشی 4دسمبر مقرر کرتے ہوئے ایس ایچ اوتھانہ صدر کہروڑپکا سے ریکارڈ طلب کر لیا۔ایس ایچ او اورتفتیشی کے درمیان جنگ شروع ۔مدعی در بدر کی ٹھوکریں کھانے لگا ۔تفصیلات کے مطابق کہروڑپکا کے نواحی علاقہ خان دا کھو کے زمیندار ملک عارف آرائیں کی شادی 8سال قبل چاہ وریام والا کے محنت کش حاجی بشیر احمد آرائیں کی صاحبزادی نسرین مائی سے ہوئی اور تین بچے بھی پیدا ہوئے۔اسی دوران زمیندار عارف آرائیں نے اپنی حقیقی سالی اقبال مائی سے مبینہ طورپر ناجائز تعلقات استوار کر لئے ۔اور اس کے خاوند عبدالخالق سے زبردستی طلاق دلوا دی اور راستے کی رکاوٹ سسر بشیر آرائیں کو راستے سے ہٹانے کے لئے قتل کر دیا تھا۔ مقتول کے بھائی کی درخواست پر مقدمہ نمبر 570/13بجرم 302ت پ ایک نامعلوم شخص کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ۔مبینہ طور پر تفتیشی آفیسر اللہ دتہ سے مرکزی قاتل صفدر آرائیں نے بااثر افراد کے ذریعے پانچ لاکھ میں خون کا سودا کیا ۔اور مورخہ 21نومبر کو مقتو ل کے بیٹے غلام محی الدین کو معہ آلہ قتل رپیٹر بارہ بور سمیت تفتیشی آفیسر کے حوالے کر دیا گیا ۔تاہم ایس ایچ او سید عارف حسین شاہ نے معاملہ کو مشکوک سمجھتے ہوئے نو عمر بچے کو باپ کا قاتل ماننے سے صاف انکا ر کر دیا۔ سید عارف حسین شاہ نے اپنی پیشہ وارنہ صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے تفتیش کی تو نوعمر بچے نے سچ اگل دیا کہ میرے بہنوئی عارف آرائیں نے میرے والد کو قتل کیا ہے جس پر ملزم غلام محی الدین کو ہمراہی ملزم قرار دے کر حوالا ت میں بند کر دیا گیا ہے جبکہ مرکزی قاتل نے ایڈیشنل سیشن جج کہروڑپکا کی عدالت سے عبوری ضمانت قبل از گرفتاری کر وا رکھی ہے جو کہ تاحال شامل تفتیش نہیں ہو ا ۔جس کی تاریخ پیشی 4دسمبر مقرر ہے عدالت نے پولیس سے آئند ہ تاریخ پیشی پر ریکارڈ طلب کر لیا ہے مقتول کا بھائی الٰہی بخش تفتیشی آفیسر کے رویے سے تنگ آکر حصول انصاف کی خاطر در بدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبو ر ہو چکا ہے۔
محنت کش قتل