نواز شریف مشرف، زرداری کی طرح امریکی غلامی، دہشتگردی کی جنگ سے باہر نکلیں: سراج الحق

نواز شریف مشرف، زرداری کی طرح امریکی غلامی، دہشتگردی کی جنگ سے باہر نکلیں: سراج الحق

لاہور (خصوصی نامہ نگار+ ثناء نیوز+ آئی این پی) جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ منبر و محراب سے آنے والے انقلاب کو طاغوتی قوتیں روکنے میں کامیاب نہیں ہوں گی۔ پاکستان اسلام کے نام پر بنا ہے اور اسلام ہی اس کی سلامتی اور بقا کا ضامن ہے۔ نوازشریف مشرف اور زرداری کی طرح امریکی غلامی کی روش چھوڑیں اور دہشت گردی کے خلاف نام نہاد امریکی جنگ سے باہر نکلیں۔ ملک میں قیام امن کے لئے مذاکرات کی کامیابی ضروری ہے۔ فی الوقت صوبائی حکومت چھوڑنا عوام کے مفاد میں نہیں۔ عمران خان نے احتجاجی تحریک کے بارے میں مشورہ نہیں کیا۔ اسلام آباد، کراچی اور لاہور سمیت کسی جگہ بھی قانون کی عملداری نظر نہیں آتی۔ مدرسہ تفہیم القرآن مردان میں تقسیم اسناد کی تقریب سے خطاب کر تے ہوئے انہوں نے کہا کہ این ایف سی ایوارڈ میں خیبر پی کے کے حصے کے واجبات ادا نہیں کئے گئے واپڈا نے خیبر پی کے کے ساتھ جو سلوک کیا ہے اُس کے خلاف عدالت میں بھی جائیں گے اور آئندہ این ایف سی اجلاس میں اس پر بات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں وہ وقت جلد آنے والا ہے جب چیف جسٹس کے ہاتھ میں قرآن ہوگا۔ وزیر اعظم پاکستان اذان دیں گے اور صدر پاکستان نماز کی امامت کرائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ موجودہ غیر مسلم نظام سے بغاوت کا اعلان کرتے ہیں جو غریب کو دو وقت کی روٹی نہیں دے سکتا۔ تقریب سے امیر جماعت اسلامی خیبر پی کے پروفیسر محمد ابراہیم خان نے بھی خطاب کیا۔ دریں اثناء وفاقی حکومت طالبان کے ساتھ مذاکرات کے لئے تشکیل کر دہ کمیٹیوں کو مینڈیٹ اور اختیارات دے ،مذاکرات میں اسٹیبلشمنٹ کی شرکت بھی یقینی بنائی جائے ،جب کمیٹیاں بااختیار ہونگی تو تب یہ ـ’’ کچھ لو اور کچھ دو‘‘ کے فیصلے کے قابل ہو جائیںگے، مذاکرات میں ناکامی کی صورت میں بدامنی اور بربادی کا خطرہ ہے، ملک مزید بدامنی کا متحمل نہیں ہوسکتا، حکومت سنجیدگی کا مظاہرہ کر کے کمیٹیوں کو مذاکرات کی کامیابی اور قیام امن کے لئے بااختیار بنائے۔ انہوںنے کہا کہ حکومت اور طالبان کی مذاکرات کا عمل جاری ہے ناکامی کی صورت میں آپریشن نہیں بلکہ پرامن ماحول، اختیاط اور تدابیر کی ضرورت ہے۔ اب حکومت کے لئے صلاحیت کا امتحان ہے اس لئے حکومت کو اس چانس سے فائدہ اُٹھانا چاہئے۔سراج الحق نے مصر میں محمد بدیع اور ان کے 683 ساتھیوں کے پھانسی کے حکم کی شدید مذمت کی ہے اور کہا کہ مصر ی حکومت امریکی خوشنودی کے لئے اپنے شہریوںکاقتل عام کر رہی ہے۔ سراج الحق نے مطالبہ کیا ہے او آئی سی، انسانی حقوق کی تنظیمیں، عرب لیگ اور حکومت پاکستان اس ظلم کے خلاف اپنا کردار ادا کریں۔ حکومت پاکستان اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے پھانسی کے حکم پر عمل درآمد رکوائیں۔