محرم الحرام اور ٹی وی چینلز ........ وقت نیوز اور پی ٹی وی نے خصوصی پروگرام نشر کئے

صابر بخاری
عشرہ محرم الحرام پاکستان سمیت دنیا بھر میں انتہائی عقیدت و احترام سے منایا گیا۔ ملک کے کونے کونے میں مجالس عزا، جلوس، نوحہ خوانی اور نیازوں کا خصوصی اہتمام کیا گیا۔ وقت نیوز اور پی ٹی وی نے بھی اس عشرہ محرم الحرام میں حضرت امام حسینؓ اور ان کے جانثار ساتھیوں کی لازوال قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کےلئے خصوصی پروگرامز نشر کیے۔
وقت نیوز نے 9 اور 10محرم الحرام کو پروگرام محفل مسالمہ نشر کیا جس کے میزبان ڈاکٹر قمر رضوی جبکہ شعراءکرام میں شاداب واسطی، نرجس افروز زیدی، نرہت عباس، توقیر تقی، تبسم صدیقی، عباس شہید، نسیم نازش، شہزاد زیدی، انوار عظمیٰ، نیئر سلطانہ اور عظمت بلگرامی شامل تھے۔ پروگرام کے پروڈیوسر شجاعت لیاقت اور ایگزیکٹو پروڈیوسر یونس ٹھاکر تھے۔ 9محرم الحرام کو مجلس شب عاشور نشر کی گئی جس کے مقرر ذاکر زکی باری تھے جبکہ 10محرم الحرام کو ذاکر عقیل الغربی نے مجلس شام غریباں پڑھی۔ اس کے علاوہ بھی وقت نیوز پر سلام، مرثیے اور نوحے عشرہ محرم الحرام میں مخصوصی ٹرانسمیشن کا حصہ تھے۔
پاکستان ٹیلی ویژن نے بھی محرم الحرام کے سلسلے میں اپنے ناظرین کیلئے معلوماتی، افادیت و اہمیت پر مبنی بہترین پروگرام ریکارڈ کیے ہیں جنہیں محرم الحرام کی نشریات میں پی ٹی وی ہوم نیوز اور نیشنل سے آن ایئر کیا گیا۔ ملک بھر سے نابغہ عصر، جید علمائ، منقبت میں منفرد مقام رکھنے والی شخصیات کو اپنے سٹوڈیوز میں دعوت دی جنہوں نے مختلف موضوعات پر پروگراموں کی مناسبت سے ناظرین کو سانحہ کربلا کے بارے میں معلومات بہم پہنچائیں۔ مقررین  کا کہنا تھا واقعہ کربلا سے واضح درس ملتا ہے کہ باطل اپنے انجام کو پہنچ جاتا ہے جبکہ حق ہمیشگی کے وجود کا نام ہے جس کی تابناکی قیامت کی صبح تک رہتی ہے ایک پیغام یہ بھی ہے کہ کلمہ حق کہنے والے کسی کے سامنے جھکتے نہیں بلکہ جان کا نذرانہ دے کر رضا الٰہی حاصل کرتے ہیں۔ پی ٹی وی لاہور مرکز نے اس سال عشرہ محرم الحرام میں یہ خصوصی پروگرام نشر کیے۔
پاکستان ٹیلی ویژن لاہور میں 15منٹ دورانیہ کے دو پروگرام مرثیہ نو تصنیف نشر کیے گئے۔ مرثیہ نگار حسن عسکری کاظمی اور حسن جاوید تھے جبکہ پروگرام کے پروڈیوسر کرامت مغل تھے۔
پروڈیوسر راﺅ ذوالفقار فرخ کے 15منٹ دورانیہ کے تین پروگرام مرثیہ تحت الفظ نشر ہوئے۔ ان کیلئے ایوب خاور‘ شجاعت ہاشمی‘ قیصر نقوی کے نام شامل ہیں۔ میرانیس کی شاعری میں سے مرثیہ تحت الفظ کا چناﺅ کیا گیا۔
مجلس شب عاشور ذاکر علامہ سید نسیم عباس رضوی نے مجلس شب عاشور میں واقعہ کربلا اور احیا دین اور بقائے انسانیت پر درس دیتے ہوئے کہا کہ امام عالی مقام سید الشہداءنے اپنی جان کا نذرانہ دے کر نانا کے دین کو سرفرازی بخشی۔ یہ پیشکش سید اظہر فرید کی تھی۔
پروڈیوسر سید اسد جمیل کا پروگرام سوزو سلام پیش کیا گیا ان میں جن نوحا خوانوں نے حصہ لیا ان میں سید جعفر عباس زیدی‘ شاہدہ منی‘ لبیک یامام پارٹی کے نام شامل ہیں۔
فلسفہ شہادت، ماہ محرم کی تاریخی حیثیت، واقعہ کربلا میں مسلمانوں کیلئے اسباق و ہدایات، تعلیمات امام حسینؓ ان درج بالا موضوعات کیلئے صاحب زادہ امانت رسول، ڈاکٹر ظہور احمد ظہیر، آغا مظہر حسین مشہدی، ڈاکٹر طاہر مصطفی، علامہ نصیر الحسن رجائی، پروفیسر محمد احمد اعوان نے الگ الگ خطاب کیا۔ عنوان کی مناسبت سے انہوں نے اپنے الگ الگ پیغامات میں کہا کہ سانحہ کربلا دراصل عشق و وفا کی داستان ہے۔ ان پروگراموں کے پروڈیوسرز زاہد اقبال، محمد یونس چشتی اور عابد حسین تھے۔
امام عالی مقام نے کربلا میں اپنے قیام سے کئی ایک اقدار کو زندہ کیا جو مصطفوی معاشرے کو زندہ رکھنے کیلئے لازم و ملزوم ہیں۔ درس کربلا پروگرام انہی عاشورائی اقدار کو زندہ کرنے کیلئے ریکارڈ اور نشر کیے گئے۔ موضوعات 1۔ کربلا اور نہی عن المنکر (علامہ ڈاکٹر محمد حسین اکبر) 2۔کربلا اور حقوق بشر (علامہ کرامت عباس حیدری) 3۔کربلا ظلم کے خلاف آواز (مولانا صادق قریشی) 4۔کربلا اور مفہوم شہادت (علامہ احمد اقبال رضوی)۔ اس پروگرام کے میزبان اطہر عابدی اور پروڈیوسر مطلوب بلوچ تھے۔
واقعہ کربلا اور خواتین کے 5منٹ دورانیہ کے الگ الگ 2پروگرام نشر کیے گئے۔ پہلے پروگرام میں میزبان کوکب شہزاد اور سکالرز میں خالدہ امجد اور صبا حسنین اور دوسرے پروگرام میں میزبان کوکب شہزاد اور سکالرز میں ڈاکٹر ثمر فاطمہ اور خانم ثمینہ کوثر کے نام شامل ہیں۔ ان سکالرز نے اپنے پیغامات میں سانحہ کربلا میں خواتین کی خدمات کے بارے میں کہا کہ خانوادائے امام عالی مقام حضرت امام حسین کے لشکر میں موجود خواتین نے کیسے اپنے نانا کے دین کو بچانے کیلئے اپنی خدمات دیں تھیں یہ پیشکش زاہد اقبال کی تھی۔
50منٹ دورانیہ کا پروگرام محفل مسالمہ نشر کیا گیا۔ اس پروگرام کے میزبان ڈاکٹر اجمل نیازی جبکہ مہمانوں میں مشکور حسین یاد، طاہر ناصر علی، خالد احمد، امجد اسلام امجد، نجیب احمد، قائم، نقوی، منظر حسین اختر، اشرف جاوید، اعجاز رضوی، زاہد مسعود، کرامت حسین بخاری، میاں محمود احمد، سید علی رضا کاظمی، عباس رضوی، علی زرعون، ضیا محی الدین شامل تھے۔ یہ پیشکش فرحانہ مشتاق اور رانا کاشف کی تھی۔
اسوہ حسین 15منٹ دورانیہ کے 10پروگرام نشر کیے گئے۔ اس پروگرام کے میزبان ڈاکٹر طاہر رضا بخاری جبکہ شرکائے گفتگو میں جسٹس (ر) افضل حیدر، صاحبزادہ امانت رسول، ڈاکٹر محمود الحسن عارف، ڈاکٹر سعد صدیقی، محمد رمضان سیالوی، محمد حسین اکبر کے نام شامل تھے۔
 ریت یہ پھول پروگرام میں سید مسیم علی نقوی، سید کونین رضا، سید علی عباس نقوی، سید علی ہاشم، گوہر صادق، سید محمد عباس، فراز حسین دانیال اور سید قائم علی شاہ سانحہ کربلا کی اہمیت و افادیت بارے میں بچوں کو آگاہی کی یہ پیشکش آغا قیصر عباس کی تھی۔
پروڈیوسر محمود عالی کے محرم الحرام میں نشر کیے گئے پروگرامویں سید جنید غزنوی نے بصیرتیں اور عبرتیں کے توصل سے ناظرین کی توجہ سانحہ کربلا سے جو عبرت اور بصیرت کی نگاہ سے رہنمائی نصیب ہوتی ہے پھر بہترین معلومات باہم پہنچائی ہیں۔
وقت ٹی وی اور پی ٹی وی کی اس کاوش میں ناظرین کو معرکہ کربلا کے بارے میں مفید معلومات میسر آئیں۔