قومی اثاثے لوٹنے میں ارب پتی لوگ ملوث ہیں‘ قوم کا بچہ بچہ مقروض ہو چکا: چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ

قومی اثاثے لوٹنے میں ارب پتی لوگ ملوث ہیں‘ قوم کا بچہ بچہ مقروض ہو چکا: چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ

پشاور (نوائے وقت نیوز+ این این آئی) پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس دوست محمد خان نے کہا ہے کہ قومی اثاثے لوٹنے میں ارب پتی لوگ ملوث ہیں، قوم کا بچہ بچہ مقروض ہوچکا ہے۔ جس کی بڑی وجہ کرپشن ہے۔ پشاور میں جوڈیشل افسروں کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا عدالتیں عوام کیلئے امید کی آخری کرن ہیں۔ لوگوں کو انصاف کی فراہمی میں اگر دانستہ تاخیر کی گئی تو ہمیں اسے درست کرنا بھی آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن اگر عام آدمی کے لئے حرام ہے تو ججز کیلئے ہزار بار حرام ہے، کرپشن نے ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کیا ہے۔ دہشت گردی نے رہی سہی کسر پوری کردی۔چیف جسٹس نے کہا کہ کرپشن پر قابو پانے کیلئے عدالتیں منظم طریقے سے کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی سطح پر تبدیلیوں پر عدلیہ کی گہری نظریں ہیں۔ چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ نے کہا صوبے میں نئی حکومت متواتر بیورو کریسی میں ردوبدل کر رہی ہے جس کی وجہ سے انصاف کی فراہمی میں تاخیر ہورہی ہے جس کی وضاحت ہونا ضروری ہے، اگر یہ دانستہ طور پر ہو رہا ہے تو اس کیخلاف سخت کارروائی کرنے پر مجبور ہوں گے۔ انہوں نے تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپکا تعلق ایک ایسے ادارے سے ہے جو 18 کروڑ عوام کیلئے امید کی کرن ہے اس موقع پر انہوں نے سامعین کو خبردار کرتے ہوئے کہاکہ کرپشن کا ایک عنصر بھی آپکے نزدیک نہیں آنا چاہئے، اتنے مراعات کے باوجود کسی نے کرپشن کرکے ادارے کی بدنامی کی تو وہ اسے قطعاً برداشت نہیں کریں گے۔