سوات: سوارہ کا ایک اور کیس، باپ کی دوسری شادی پر 3 سالہ بچی کا نکاح

سوات (اے پی پی) سوات کے علاقے مدین میں بھی سوارہ کا کیس سامنے آگیا۔ مقامی جرگہ نے باپ کی دوسری شادی کرنے پر اسکی تین سالہ بیٹی کو سوارہ قرار دیکر دوسری بیوی کے بھائی سے نکاح کرا دیا۔ مدین پولیس نے متاثرہ بچی کی ماں کی رپورٹ پر 5 ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرکے 4 ملزمان کو گرفتار کرلیا، ایک ملزم روپوش ہوگیا۔ سوات میں رواں ہفتے کے دوران سوارہ کا یہ پانچواں کیس ہے، تین کیسوں کے مقدمات درج کرلئے گئے ہیں۔ مدین کی رہائشی خاتون طاہرہ بیگم زوجہ علی احمد نے درخواست دی تھی کہ اسکے شوہر علی احمد نے تین سال قبل مہوش دخترعلی باش کو مبینہ طور پر اغوا کرکے اس سے شادی رچائی تھی جس کی سزا اسکی تین سال کم عمر بیٹی مسماۃ ثمیدہ کو دیدی گئی۔ علاوہ ازیں سوات کی وادی کالام کے سوارہ کیس میں متاثرہ بچیوں کے باپ سمیت 10 ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔ 7 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔ مزید گرفتاریوں کا امکان ہے، وادی کالام میںباپ کی دوسری شادی کی سزا اسکی دو کم عمر بیٹیوں کو دیکر مقامی جرگہ نے زبیب کی پہلی بیوی سے دو کم عمر بیٹیوں کو سورہ قرار دیکر نابالغ لڑکوں سے نکاح کرادیا تھا۔