خودسوزی کیس، نامزد ملزم ڈی ایس پی اصغر علی کی عبوری ضمانت منظور، تحقیقاتی کمیٹی کام مکمل کرکے لاہور پہنچ گئی

ڈیرہ غازیخان+ مظفرگڑھ (نامہ نگاران) مظفر گڑھ کے علاقہ بیٹ میر ہزار تھانہ کے سامنے طالبہ آمنہ مائی خود سوزی کیس میں نامزد ملزم ڈی ایس پی چوہدری اصغر علی نے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں اپنے وکیل صدر ڈسٹرکٹ بار قاضی صدر الدین علوی کے ہمراہ پیش ہو کر عبوری ضمانت منظور کرالی۔ نامزد ملزم چودھری اصغر علی نے پہلے ہی لاہور ہائیکورٹ سے حفاظتی ضمانت منظور کرا رکھی تھی۔ عدالت انسداد دہشت گردی کے جج سجاد حسین سندھڑ نے 31 مارچ تک عبوری ضمانت منظور کرلی ہے۔ تفتیشی آفیسر رانا ذوالفقار پہلے ہی گرفتار ہے اور جوڈیشل پر جیل میں ہے۔ دریں اثناء سپریم کورٹ کے حکم پر طالبہ خودسوزی کیس کیلئے تشکیل دی جانیوالی اعلیٰ سطحی انکوائری ٹیم مظفرگڑھ میں اپنا کام مکمل کرکے واپس لاہور روانہ ہوگئی۔ ایڈیشنل آئی جی سپیشل  برانچ محمد آمیش خان کی زیر قیادت ڈی آئی جی انوسٹی گیشن اظہر حمید کھوکھر اور ایک ایس ایس پی پر مشتمل اعلیٰ سطحی تحقیقاتی ٹیم ایک ہفتہ قبل مظفرگڑھ پہنچی تھی۔ انکوائری ٹیم نے مظفرگڑھ میں پولیس آفیسران و اہلکاروں کے بیانات قلمبند کرنے کے علاوہ مقامی صحافیوں‘ ملزمان کے اہلخانہ‘ خود سوزی کرنے والی آمنہ بی بی کے اہلخانہ سمیت مختلف گواہان‘ عینی شاہدین اور دیگر افراد کے بیانات بھی قلمبند کئے۔