حافظ آباد: بااثر افراد کی مسیحی نوجوان پر تشدد کے بعد زیادتی، اہل علاقہ کا احتجاج

حافظ آباد+ فیصل آباد (نمائندہ نوائے وقت+ نمائندہ خصوصی+ نامہ نگاران) حافظ آباد میں نوجوان پر تشدد کے بعد زیادتی، اہل علاقہ کا بااثر افراد کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، ایک ملزم کو گرفتار کر لیا گیا۔ حافظ آباد میں معمولی جھگڑے پر بااثر چودھری 14 سالہ مسیح نوجوان پر وحشیانہ تشدد کرتے ہوئے مبینہ طور پر زیادتی کرتے رہے۔ مسیحی نوجوان سے بدلہ لینے کے لئے ملزمان گن پوائنٹ پر اسکے بڑے بھائی سے زیادتی کرواتے رہے۔ ملزمان حالت غیر ہونے پر مسیحی نوجوان کو کھیتوں میں پھینک کرفرارہو گئے۔  اہل علاقہ کا بااثر چودھریوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ، پولیس نے چار افراد کے خلاف مقدمہ درج کر کے ایک ملزم کو گرفتار کر لیا جبکہ متاثرہ نوجوان کو ڈسٹرکٹ ہسپتال داخل کروا دیا گیا۔ تھانہ کسوکی کے نواحی گائوں مٹم کے مسیحی نوجوان وکرم عرف وکی کا اپنے گائوں کے بااثر چودھری اعجاز وغیرہ سے چند روز قبل معمولی جھگڑا ہوا جس کابدلہ لینے کے لئے بااثر چودھریوں نے مبینہ طور پر 14 سالہ وکرم عرف وکی کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے اس سے زیادتی کی اور اسے شراب بھی پلائی، بدلے کی آگ نہ بجھنے پر ملزمان نے گن پوائنٹ پر اُسکے بڑے بھائی عدنان عرف دانی کو بھی اسکے ساتھ زیادتی کرنے کا کہا، انکار پر ملزمان نے اسلحہ کے زور پر عدنان اور وکرم عرف وکی کو سرعام تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے زبردستی عدنان عرف دانی کو وکرم سے زیادتی کروائی۔ حالت غیر ہونے پر ملزمان 14 سالہ مسیحی نوجوان وکرم کو کھیتوں میں پھینک کر فرار ہو گئے۔ پولیس تھانہ کسوکی نے اعجاز،جاوید سمیت چار ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے ایک ملزم جاوید کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ زیادتی کے شکار مسیحی نوجوان کو طبی امداد کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دیا۔ علاوہ ازیں فیصل آباد سیالکوٹ لالیاں میں خاتون، لڑکی، کمسن بچے اور نوجوان کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔ فیصل آباد میں   تھانہ جھنگ بازار کے علاقہ لیاقت آباد نمبر2 کے اصغر علی کی 12سالہ ہمشیرہ کو ملزمان شفیق وغیرہ راہ جاتے ہوئے زبردستی اپنے ساتھ محلے میں واقع ایک خالی گھر میں لے گئے اور اسے مبینہ طو رپر باری باری زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔ بلوچنی کے علاقہ چک نمبر57ر۔ب کے محمد اکرم کی اہلیہ (م) کو ملزم اللہ دتہ گھر سے اغوا کر کے نامعلوم مقام پر لے گیا جہاں اسے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔ علاوہ ازیں ملت ٹاؤن چک نمبر202ر۔ب کے نذیر احمد کی جواں سالہ بیٹی(ص) کو ملزمان بابر وغیرہ پانچ افراد نے اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔ تھانہ سول لائن کے علاقہ پاک پورہ میں جمیل مسیح کا بیٹے سمیر گلی میں کھیل رہا تھا بشارت اورندیم ورغلا کر لے گئے اور اس سے زیادتی کر ڈالی۔ تھانہ ملت ٹاؤن کے علاقہ چک نمبر117ج۔ب دھنولہ کے رہائشی نذیر احمد کا 6 سالہ بیٹا گلی میں کھیل کود میں مصروف تھا اسی دوران ملزم شہزاد اسے ورغلا پھسلا کر خالی پلاٹ میں لے گیا اور اسے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا کر حالت غیر میں کمسن بچے کو پھینک کر موقع سے فرار ہوگیا۔ اوکاڑہ سے نامہ نگار کے مطابق نواحی قصبہ جبوکہ کے رہائشی امداد حسین کی بیوی ارم شہزادی دکان سے سودا سلف خریدنے جا رہی تھی راستے میں آتشیں اسلحہ سے مسلح محمد امین، محمد جعفر، ریاض، ولایت، ذوالفقار، احسان، عمران شریف، رفیق، عمران یوسف اور سکینہ بی بی اسے گن پوائنٹ پر گاڑی میں اغوا کر کے لاہور لے گئے جہاں ذوالفقار اسے پانچ ماہ تک زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔ علاوہ ازیں لالیاں میں تھانہ محمد والا کے گاؤں پنجے والا  کے نوجوان  اعجاز کو مقامی  زمیندار مراتب بھٹی  نے فون کرکے بہانے  سے گھر بلایا اور گن پوائنٹ پر تین افراد نے زیادتی کر ڈالی۔