بدامنی پھیلانے والی قوتیں انتخابات میں رکاوٹیں ڈال رہی ہیں: فضل الرحمن

 بدامنی پھیلانے والی قوتیں انتخابات میں رکاوٹیں ڈال رہی ہیں: فضل الرحمن

 پشاور (نوائے وقت نیوز، ایجنسیاں) جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے قطر کے دارالحکومت دوہا میں طالبان سے مزاکرات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا طالبان سے کوئی رابطہ ہوا اور نہ ہی انہوں نے کوئی درخواست کی ہے جو طالبان رد کرتے۔ پشاور میں فاٹا کے پارلیمانی لیڈر منیر اورکزئی کی جے یو آئی میں شمولیت کے موقع پر پریس کانفرنس کے دوران مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ وہ قطر نجی دورے پر گئے تھے۔ مقامی طالبان کے ساتھ بھی رابطہ صرف اخباری بیانات کی حد تک ہے لیکن ان کی اس پیشکش کو بھی سنجیدگی کے ساتھ لینا چاہیئے۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انتخابات ہونگے اور جو قوتیں انتخابات کی راہ میں روکاوٹیں ڈالنا چاہتی ہیں عوام انہیں شکست دینگے۔ کوئٹہ میں بدامنی پھیلانے والی قوتیں ملک میں عام انتخابات کے انعقادکی راہ میں رکاوٹیں ڈال رہی ہیں۔ طالبان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش ایک مثبت پیش رفت ہے اوراس موقع سے ہمیں فائدہ اٹھانا چاہیئے، ہم نے پہلے سے قبائلی جرگہ تشکیل دیا ہے جس کے مثبت اثرات سامنے آرہے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں فضل الرحمان نے کہاکہ انہوں نے جے یوآئی (ف) بلوچستان کی قیادت کوہدایت کی ہے کہ وہ ہزارہ برادری سے رابطہ کرکے جو لوگ ملک کے اندر مذہبی منافرت اور انتشارپ ھیلا رہے ہیں ان کی سازش کو بے نقاب کرانے کے سلسلہ میں ہزارہ برادری کے ساتھ ہرممکن تعاون کرے۔