گوجرانوالہ: لوہیانوالہ نہر سے تیسرے روز بھی سر کٹی نعش برآمد، تعداد 3 ہوگئی

گوجرانوالہ (نمائندہ خصو صی )گوجرانوالہ میںلوہیانوالہ نہر سے گولیوں سے چھلنی سر کٹی ایک اور نعش برآمد، تعداد تین ہو گئی۔ کپڑوں سے دو نعشوں کی شناخت کر لی گئیں۔ مقتو لین سگے بھائی ہیں جبکہ تیسری نعش کی شناخت جاری ہے۔گوندلانوالہ کے قریب لوہیا نو الہ نہر سے تیسرے روز بھی ایک اور گولیوں سے چھلنی سر کٹی نعش برآمد ہو ئی ہے جس کے بعد نہر سے ملنے والی سر کٹی نعشوں کی تعداد تین ہو گئی ہے۔ تینوں نعشوں کو تشدد کے بعدگولیاں مار کر قتل اور بعدازاں ان کے سر دھڑ سے الگ کر کے نہر برد کر دیا گیا۔ لدھیوالہ پولیس نے ان میں سے دونعشوں کی شناخت کپڑوں سے جاویدعنایت اور پرویز عنایت کے ناموں سے کر لی ہے۔ مقتولین سگے بھائی اور کوٹلی رستم گرجاکھ کے ر ہائشی ہیں۔ لواحقین کا کہنا ہے دونوں بھائی چار روز سے لاپتہ تھے ۔ پولیس کا کہنا ہے تیسری نعش کی شناخت بھی جلد کر لی جا ئے گی ، تاہم لدھیوالہ اور اورپ پولیس نے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ علاوہ ازیں گوجرانوالہ نہر اپر چناب سے ادھیڑ عمر شخص کی دس روز پرانی نعش برآمد۔ تھانہ اروپ کے علاقہ میں نندی پور نہر سے گزشتہ روز پچاس پچپن سالہ شخص کی نعش برآمد ہوئی، پولیس نے ضروری کارروائی کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ شناخت نہیں ہوسکی۔