مناظرے کے چیلنج جیسی باتوں کا جواب دینا مناسب نہیں سمجھتا: طاہر القادری

مناظرے کے چیلنج جیسی باتوں کا جواب دینا مناسب نہیں سمجھتا: طاہر القادری

لندن (نوائے وقت رپورٹ) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ ماڈل ٹائون واقعہ میں 12 افراد شہید ہوئے، پندرہ گھنٹے تک پولیس دہشت گردی کرتی رہی، کسی نے کیوں نہ روکا؟ نجی ٹی وی سے  خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 200 افراد لاپتہ ہیں ان کا جواب کون دے گا۔ 15 افراد کی نعشیں غائب کرا دی گئیں، رانا ثناء اللہ کی طرف سے مناظرے کے چیلنج پر طاہر القادری نے کہا کہ میں ایسی باتوں کا جواب دینا مناسب نہیں سمجھتا، میں یہی کہتا ہوں کہ جھوٹوں پر خدا کی لعنت ہو۔ زخمیوں کے جسم سے گولیاں ہی نہیں نکالی جارہیں۔ دریں اثناء عوامی تحریک کے رہنما کے مطابق جوڈیشل کمشن نے منہاج القرآن کا دورہ کیا، اس موقع پر کسی کا بیان قلمبند نہیں کیا گیا۔