نارنگ منڈی: شادی نہ کرنے کی رنجش، سابق آشنا کو کراچی سے بلاکر جسم کے ٹکڑے کر دئیے

نارنگ منڈی (نامہ نگار) نواحی قلعہ کالروالا میں نوبیاہتا دلہن نے شادی نہ کرنے کی رنجش پر اپنے سابق آشنا سہیل احمد کو کراچی سے بلا کر اغواء کے بعد اس کے جسم کے ٹکڑے کر کے کھیتوں میں بکھیر دئیے جسے کوے اور کتے نوچتے رہے۔ پولیس نے پندرہ روز بعد لرزہ خیز قتل کا سراغ لگا کر قاتلہ نسرین بی بی اور اس کے خاوند لیاقت علی کو گرفتار کر کے تحقیقات شروع کر دی ہے۔ مقتول کا سر تاحال نہیں مل سکا جبکہ باقی جسم کے ٹکڑوں کو سپردخاک کر دیا گیا ہے۔ ملزمہ نسرین بی بی اور مقتول سہیل احمد آپس میں حقیقی کزن تھے کئی سال قبل دونوں میں شادی کے عہدوپیمان ہوئے۔ بعدازاں نسرین بی بی کو علم ہوا مقتول نے کراچی جا کر شادی کر لی ہے۔ ملزمہ نے مقتول کو گائوں بلایا اور ملنے کے بہانے گئی۔ بعدازاں ملزمہ نے اْسے نشہ آور جوس پلایا اور بے ہوش کرکے خاوند کی مدد سے اسکی گردن کاٹی، پھر جسم کے ٹکڑے ٹکڑے کر کے بوری میں بند کرکے  کھوکھر والی قلعہ کالروالا ایم آر لنک کے قریب کھیتوں اور گندے نالے میں بکھیر دئیے۔ پولیس نے موبائل فون کے ذریعے ملزمان کا سراغ لگایا۔ ملزمان نے اقرار جر م کر لیا ہے۔ واضح رہے  ملزمہ نے بیان دیا ہے مقتول نے اْسے دھوکہ دیا ہے اس نے بدلہ لینے کیلئے اسے قتل کیا ہے ۔