ایف سی کے 50 پلاٹونز 22 اپریل تک واپس ہو جائیں گے: پشاور ہائیکورٹ میں رپورٹ

ایف سی کے 50 پلاٹونز 22 اپریل تک واپس ہو جائیں گے: پشاور ہائیکورٹ میں رپورٹ

پشاور (نوائے وقت نیوز+ آئی این پی) پشاور ہائی کورٹ میں فرنٹیر کانسٹیبلری سے متعلق خود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی۔ وزارت داخلہ کے سینئر جوائنٹ سیکرٹری عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت میں بیان دیا کہ فرنٹیر کانسٹیبلری کے 50 پلاٹونز 22 اپریل تک خیبر پی کے کو واپس ہو جائیں گے۔ ایف سی کے باقی پلاٹونز کی واپسی کیلئے عدالت مہلت دے۔ چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس دوست محمد کھوسہ نے کہا کہ فرنٹیر کانسٹیبلری تو ایسی فورس ہے جہاں حالات خراب ہیں وہاں ہونا چاہئے۔ ایف سی کو وی آئی پیز کی سکیورٹی پر مامور کیا گیا ہے۔ آئی این پی کے مطابق کیس کی سماعت چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ دوست محمد خان نے کی اور سینئر جائنٹ سیکرٹری داخلہ کی استدعا قبول کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 7 مئی تک ملتوی کردی۔