جماعۃ الدعوۃ کیخلاف کوئی ثبوت ہے نہ اس پر پابندی: وزیر دفاعی پیداوار

مریدکے (نامہ نگار) وفاقی وزیر دفاعی پیداوار رانا تنویر حسین نے کہا ہے کہ فوجی عدالتیں سبھی جماعتوں کے قائدین کی متفقہ رائے سے بنائی گئی ہیں۔ 21ویں ترمیم بھی متفقہ تھی لیکن حکومت پھر بھی مذہبی لوگوں کے تحفظات کو دور کرنے کیلئے خصوصی اقدامات کر رہی ہے۔ دہشت گرد وطن اور قوم کے دشمن ہیں، ہمیں نقصان کی پرواہ نہیں، انہیں دفن کر کے دم لیں گے۔ اس امر کا اظہار رانا تنویر نے گزشتہ روز ’’نوائے وقت‘‘ سے خصوصی انٹرویو میں کیا۔ اس موقع پر صاحبزادہ حاجی محمد امجد اجمل، رانا محمد رفیع، ڈاکٹر محمد منشاء ہنجرا دیگر بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اب بس کریں یہ وقت احتجاج کا نہیں بلکہ متحد ہو کر ملک بچانے کا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاکوں پر پوری پارلیمنٹ نے متفقہ طور پر قرارداد منظور کی ہے جس کا کریڈٹ وزیراعظم نواز شریف کو جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اندرونی و بیرونی قوتوں سے خطرہ ہے لیکن انشاء اللہ کامیاب ہو کر رہیں گے۔ انہوں نے کہا 21ویں ترمیم میں صرف مذہبی نہیں بلکہ لسانی، علاقائی، سیاسی لوگ جو دہشت گردی کے مرتکب ہونگے ان کو برابر سزا ملے گی۔ حکومت مذہبی لوگوں کو راضی کر لے گی۔ نوائے وقت نیوز کے مطابق دفاعی پیداوار کے وزیر رانا تنویر حسین نے کہا ہے کہ جماعۃ الدعوۃ کے خلاف کوئی ثبوت نہیں، جماعۃ الدعوۃ   پر کوئی پابندی نہیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر ایک متنازعہ علاقہ ہے، اس پر بات کرنا دہشت گردی کے زمرے میں نہیں آتا۔