بااثر حلقوں کا دباﺅ مسترد، پنجاب حکومت کا ”بسنت“ کی اجازت دینے سے انکار

بااثر حلقوں کا دباﺅ مسترد، پنجاب حکومت کا ”بسنت“ کی اجازت دینے سے انکار

لاہور (وقائع نگار) صوبے بھر میں کسی مقام پر ”خونی کھیل“ پتنگ اڑانے کی کسی کو بھی اجازت دی گئی ہے اور نہ ہی دی جائے گی۔ چار سال کے دوران 500افراد کی گردنیں کٹ گئیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پتنگ مافیا ہندﺅوں کے تہوار ”بسنت“ کو منانے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگا رہا ہے اور اعلیٰ افسروں پر دباﺅ ڈال رہے ہیں لیکن صوبائی حکومت کسی دباﺅ میں آئی ہے نہ آئے گی ”پتنگ مافیا“ سے نمبٹنے کے لئے متعلقہ حکام کو پہلے ہی سختی سے ہدایات جاری کی جا چکی ہیں۔ جس گھر سے پتنگ اڑتی نظر آئے گی پولیس سیڑھیاں لگا کر پتنگ بازوں کو گرفتار کر لے گی۔ کوئی بھی جانی نقصان ہونے کی صورت مینں متعلقہ علاقے کے SHO کے خلاف قانونی اور محکمانہ کارروائی شروع کی جائے گی۔