ریڈیو اور رمضان المبارک

 اصغر ملک
ماہ رمضان المبارک رحمتوں، بخششوں اور برکتوں کا وہ مہینہ ہے جس میں خالق کائنات نے فرشتوں کے سردار حضرت جبرائیل علیہ السلام کے ذریعے سرکار دو عالم نبی رحمت ہمارے آقا و مولا یتیموں کے والی سب سے عالی امام الانبیائﷺ پر وحی کے ذریعے قرآنِ پاک کا نزول فرمایا اور یہ وہ آسمانی صحیفہ ہے جس میں دین و دنیا کی ہدایت و رہنمائی موجود ہے۔ ہر مسلمان اس کی تلاوت سے روحانی تسکین اور دین و دنیا کی بھلائی مشکل کشائی اور حضرت محمد مصطفےٰﷺ احمد مجتبٰیﷺ کے وسیلہ جلیہ سے خدا تک رسائی کا متمنی رہتا ہے اور اسی ماہ مبارک میں دنیا میں جہاں کہاں کملی والے کے غلام مسلمان آباد ہیں وہاں کی مسجدوں میں نمازِ تراویح کے دوران ہر روز قرآن حکیم کے ایک پارہ کی تلاوت باجماعت ادا کی جاتی ہے اور یہی وہ ماہ مبارک ہے جس میں نماز تراویح اور نماز وتر ادا کی جاتی ہے اور لیلة القدر بھی اسی ماہ میں آتی ہے۔ ریڈیو پاکستان کے ہر اسٹیشن سے قومی رابطے پر خانہ کعبہ سے نماز تراویح بھی نشر کی جا رہی ہے اور یہ سلسلہ تیس 30 رمضان المبارک تک جاری رہے گا شہروں سے لے کر دستی کام کرنے والے لوگ سحری سے افطاری بھی ریڈیو کی خصوصی نشریات سے کرتے دکھائی دے رہے ہوتے ہیں۔ ریڈیو پاکستان اس ماہ مبارک میں روزانہ کے پروگرام جو صبح 5 بج کر 45 منٹ سے سات بجے صبح تک حئی علی الفلاح قومی نشریاتی رابطے پر نشر کیا جاتا ہے۔ اس میں احادیث کی تشریخ و تفسیر کا سلسلہ درس حدیث، اخلاقی اقدار پر مبنی تقاریر و روشنی، دینی مسائل اور ناموراسکالر و علماءکرام کی زبانی جوابات، قرآن اور ہماری زندگی نامور نعت خوانوں کی آوازوں میں حمد و نعت اور درود و سلام اس پروگرام کا حصہ ہوتے ہیں۔ پارہ با پارہ قرآن پاک کے ایک پارہ کی تلاوت اور ترجمہ روزانہ سحری اور افطاری کی خصوصی ٹرانسمشن جو یکم رمضان سے 30 تک جاری ہے جس میں رمضان کا پیغام کے عنوان سے خصوصی گفتگو جس میں نامور اسکالر پروفیسر سعید احمد خان اور دیگر حضرات حصہ لے رہے ہوتے ہیں اور یہ پیشکش ریڈیو پاکستان لاہور کی ہوتی ہے اس کے علاوہ سیمیناروں کا سلسلہ بھی قرآن کریم اور تسخیر کائنات، رمضان المبارک 1431ھ قرآن پاک میں وجود کائنات کا مفصل ذکر کیا گیا ہے جس کا مقصد انسان کی رہنمائی کرتا ہے کہ وہ اسے مسخر کرنے اور اس میں پوشیدہ خزانوں کو اپنے اور دیگر مخلوقات کی بہتری اور بھلائی کے لئے احکام الٰہی اور سرکار دو عالم نبی رحمت مدینے کے والی سب سے عالی امام الانبیائﷺ کے بتائے ہوئے راستے پر چلتے ہوئے اپنی انداز میں استعمال کرے کہ وہ نہ صرف اپنے بلکہ دیگر مخلوقات کے لئے بھی مفید ثابت ہوں۔ قرآن جو حکمت و دانائی دنیا کی رہنمائی اور بھلائی کا آسمانی صحیفہ ہے اس میں علم الطبیعات، کیمسٹری، زوالوجی، طب، حساب و جیومیٹری اور دیگر علوم و فنون کا بلاواسطہ اور بالواسطہ ذکر کیا گیا ہے۔ خالق و مالک اور کائنات کو حقیقی معنوں میں سمجھنے اور عمل کرنے کے لئے قرآن مجید سے درست رہنمائی حاصل کرنا اشد ضروری ہے تاکہ ہم نہ صرف اس دنیا میں بلکہ آخرت میں بھی کامیابی و کامرانی حاصل کر سکیں۔ ریڈیو پاکستان نے اس حوالے سے رمضان المبارک کے اس مہینے میں جو خصوصی سیمیناروں کا اہتمام کیا ہے۔ اس میں قرآن اور تسخیر کائنات، قرآن اور علم الطبعیات ، چاند سورج ستارے سیارے اور زمین ایک خاص توازن کے ساتھ محو گردش ہے۔ دن رات کے بدلنے میں سوچنے والوں کے لئے بہت سی نشانیاں رکھی گئی ہیں۔ ان نشانیوں کے حوالے سے قرآن کریم میں کئی جگہوں پر تفصیل سے تخلیق کائنات کے مختلف مدارج بیان کئے گئے ہیں۔ کالم کی طوالت کی وجہ سے باقی سیمیناروں کا ذکر آئندہ پیش کروں گا۔ روزہ بندے اور خدا کے درمیان ایک بھیدجس کا اجر خدا خود دے گا، لیکن روزے مسلمانوں پر فرض ہیں اور سال کے بعد یہ مہینہ آتاہے اور اس فرض سے کوتائی نہیں کرنی چاہیے پتہ نہیں آئندہ سال ہم کہاں ہوں گے کوشش کی جائے کہ اعتکاف میں بھرپور حصہ لیا جائے۔