جھنگ: 12 سالہ لڑکی کی 40 سالہ شخص سے شادی

جھنگ (نامہ نگار) چائلڈ پروٹےکشن رائٹس کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تھانہ موچےوالہ کے علاقہ چک نمبر 169ج ب مےں 12سالہ لڑکی کی شادی 40 سالہ شخص سے کر دی گئی۔ ضلعی حکومت اور انسانی حقوق کی تنظےمےں خاموش تماشائی بنی رہیں۔ مقامی تھانہ موچےوالہ کو اطلاع کرنے کے باوجود نکاح خواں اور نکاح رجسٹرار کے خلاف کوئی کارروائی نہ کی گئی اور پولےس ملزمان کو تحفظ فراہم کرتی رہی۔ تفصےلات کے مطابق چند دن قبل 12 سالہ صبا نامی نابالغ لڑکی کا نکاح و شادی فلک شےر نامی 40 سالہ سے کر دی گئی جس کے متعلق مقامی تھانہ کو فی الفور اطلاع کی گئی لےکن قانون کی سراسر خلاف ورزی ہونے کے باوجود تاحال دولہا فلک شےر، نکاح خوان حضور محمد اور نکاح رجسٹرار شےر محمد کے خلاف تاحال کوئی کارروائی عمل مےںنہ لائی گئی ہے۔ عوامی و سماجی حلقوں نے وزےراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کےا ہے کہ کم عمری کی شادےاں کرنے والے عناصر کے خلاف سخت ترےن کارروائی کی جائے۔
جھنگ/ 12 سالہ لڑکی شادی