گوجرانوالہ: چوکی انچارج کا اہلکاروں سمیت خاتون پر وحشیانہ تشدد، حالت غیر ہونے پر 8 گھنٹے بعد چھوڑ دیا

گوجرانوالہ (نمائندہ خصوصی) چوکی انچارج کا اہلکاروں سمیت خاتون پر وحشیانہ تشدد، حالت غیر ہونے پر 8 گھنٹے کے بعد چھوڑ دیا گیا۔ خاتون نے علاقہ مجسٹریٹ سے آرڈر لے کر میڈیکل لیگل حاصل کر لیا۔ خاتون پر تشدد کیا گیا ہے ڈاکٹرز کی رپورٹ کارروائی کیلئے تھانہ قلعہ دیدار سنگھ میں درخواست ۔ قلعہ دیدار سنگھ کے علاقہ بل کی خاتون زبیدہ بی بی زوجہ محمد اسلم کے گھر میں سول کپڑوں میں ملبوس چوکی کلر آبادی کا انچارج رانا امتیاز، ہیڈ کانسٹیبل محمد اشرف، کانسٹیبل محمد جمیل، غلام مصطفٰی، عاصم خاں اور سعید جاوید مسلح داخل ہو گئے۔ خاتون  نے الزام لگایا ہے چوکی انچارج نے اہلکاروں سمیت میرے گھر میں لوٹ مار کی کوشش کی اور زبردستی مجھے تھانہ باغبانپورہ کی چوکی کلر آباد میں لے آئے جہاں پر آٹھ گھنٹے تک وحشیانہ تشدد کرتے رہے، حالت غیر ہونے پر چوکی کے باہر پھینک دیا گزشتہ روز زخمی خاتون نے علاقہ مجسٹریٹ کے حکم پر ڈی ایچ کیو سے میڈیکل لیگل حاصل کیا ہے۔ ڈاکٹرز کے مطابق خاتون پر بری طرح تشدد کیا گیا ہے خاتون نے چوکی انچارج اور پولیس اہلکاروں کے خلاف کارروائی کیلئے تھانہ قلعہ دیدار سنگھ میں درخواست دے دی ہے۔