ملتان سٹیشن پر ہزارہ ایکسپریس کی 2 بوگیوں میں آگ بھڑ ک اٹھی ایک خاکستر

 ملتان سٹیشن پر ہزارہ ایکسپریس کی 2 بوگیوں میں آگ بھڑ ک اٹھی ایک خاکستر

ملتان (سٹاف رپورٹر) ناقص سکیورٹی انتظامیہ کی غفلت‘ ریلوے یارڈ اور واشنگ لائن میں کھڑی 2 بوگیوں میں آگ بھڑک اٹھی‘ ایک بوگی کو بچا لیا گیا جبکہ دوسری مکمل طور پر جل گئی‘ محکمے کو لاکھوں روپے کا نقصان انکوائری کیلئے ٹیم تشکیل دیدی گئی۔ اس ضمن میں گزشتہ روز صبح 6:40 پر 11 اپ ہزارہ ایکسپریس کی بوگیاں واشنگ لائن اور ریلوے یارڈ میں کھڑی تھیں کہ اچانک ان میں آگ بھڑک اٹھی آگ نے ایک بوگی نمبر 9191-6 کو مکمل طور پر  لپیٹ میں لے لیا جس سے بوگی جل کر خاکستر ہو گئی جبکہ دوسری بوگی کی محض 2 سٹیں نمبر 18 اور 24 پر آگ کے شعلے بھڑک رہے تھے جسے یارڈ ملازمین سے اکھاڑ پر باہر پھینک دیا اور بوگی کو مزید جلنے سے بچا لیا۔ فائر بریگیڈ لوکل گورنمنٹ اور ریسکیو 1122 نے مشترکہ آپریشن کر کے ایک گھنٹہ بعد آگ پر قابو پایا اندازے کے مطابق ریلوے کو 50 لاکھ روپے کا نقصان ہوا جب آگ لگی اس وقت نہ تو ریلوے پولیس کا کوئی ایک بار ڈیوٹی پر موجود تھا اور نہ ہی ریلوے یارڈ کا کوئی ملازم ڈی ایس ریلوے شاہ رخ خان نے بتایا کہ 3 رکنی انکوائری کمیٹی بنا دی ہے جو 3 روز میں رپورٹ دیگی انہوں نے بتایا کہ ایس پی ریلوے کو واقعہ کا پرچہ درج کرنے کا بھی حکم دیدیا ہے جبکہ ایس پی ریلوے ملتان ڈویژن راجہ ظہیر ارشد نے کہا کہ آگ شارٹ سرکٹ کے باعث ہوئی اور ایک بار ڈیوٹی پر موجود تھا۔ اس حوالے سے ریلوے سٹیشن پر موجود افراد کا کہنا ہے کہ کھڑی بوگی میں شارٹ سرکٹ نہیں ہو سکتا کیونکہ پاور پلانٹ ساتھ نہیں ہوتا جس سے بوگیوں میں کرنٹ فراہم کیا جاتا ہے۔ یاد رہے کہ 8 ستمبر سوموار کو حبیب کوٹ ریلوے سٹیشن پر خوشحال خٹک ایکسپریس کی بوگی نمبر 6021 اور 9 ستمبر منگل کو روہڑی ریلوے سٹیشن پر سپیئر کھڑی بوگی نمبر 8515 کو بھی پر اسرار طور پر جلا دیا گیا تھا اس لئے یہ واقعہ دہشت گردی یا تخریب کاروں کی کارروائی بھی ہو سکتا ہے۔