قصور انتظامیہ سیلاب کے خطرے سے بے خبر، ریسکیو 1122کی کشتیاں ناکارہ ہو گئیں

قصور (نمائندہ نوائے وقت) قصور اور گردونواح میں سیلاب کے خطرے کے پیش نظر انتظامیہ کی طرف سے بچائو کیلئے کوئی انتظامات نظر نہیں آ رہے سیلاب کی صورت میں استعمال ہونے والی ریسکیو سروس کی کشتیاں ناکارہ ہو گئیں۔ تفصیل کے مطابق پنجاب حکومت نے پورے پنجاب کے تمام اضلاع کی انتظامیہ کو ہائی الرٹ رہنے کی ہدایات جاری کر رکھی ہیں بھارت کی طرف سے دریائے ستلج اور روہی نالہ میں پانی چھوڑنے کے بعد دریا کے قرب و جواب میں موجود دیہاتوں میں سیلابی پانی داخل ہونے کا خطرہ ہے اور ضلعی انتظامیہ نے ممکنہ سیلاب سے نمٹنے کے لیے متعلقہ اداروں کو ہدایات جاری کر رکھی ہیں ہمارے ذرائع کے مطابق 1122 ریسکیو آفس کے پاس خالی پلاٹ میں پڑی ٹوٹی ہوئی کشتیاں تاحال کیچڑ میں دھنسی ہوئی ہیں جن میں جگہ جگہ سوراخ پڑ گئے ہیں۔ عوامی حلقوں کے مطابق کشتیوں کی مرمت کے علاوہ دیگر ضروری مشینری کو ہمہ وقت الرٹ رکھنا چاہیے تاکہ خدانخواستہ اگر پانی سے نقصانات بڑھنے کا خدشہ ہوا تو فوری طور پر لوگوں، مال مویشیوں کو محفوظ جگہ منتقل کرنے کا فوری بندوبست ہو سکے۔