جنسی جرائم کے مرتکب افراد کے بھائیوں میں بھی اسی جرم کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں

جنسی جرائم کے مرتکب افراد کے بھائیوں میں بھی اسی جرم کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں

لندن (بی بی سی) ایک تحقیق کے مطابق جن افراد کے بھائی جنسی جرائم کے مرتکب ہوتے ہیں ان میں اس طرح کا جرم کرنے کے امکانات پانچ گنا زیادہ ہوتے ہیں۔ تحقیق میں کہاگیا ہے جنسی جرائم میں جینز کا اثر کافی زیادہ ہوتا ہے۔ سویڈن میں 1973ءاور 2009ءکے درمیان کی جانیوالی اس تحقیق میں 21,566 مردوں کا تجزیہ کیا گیا جن سے جنسی جرائم سرزد ہوئے تھے۔ یونیورسٹی آف آکسفورڈ کے پروفیسر سینا فاضل کہتے ہیں کہ اس تحقیق کے نتائج سے جرم روکنے میں مدد مل سکتی ہے۔ تحقیق سے یہ بھی سامنے آیا کہ جنسی جرائم میں سزا پانے والے 2.5 فیصد افراد کے بھائی بھی یہ جرم مرتکب کرچکے ہیں۔ اس تحقیق میں جنسی جرائم میں سزا پانے والوں کے بیٹوں کے ریکارڈ کو بھی دیکھا گیا جس سے سامنے آیا کہ وہ عام سویڈن کے افراد کی نسبت چارگنا زیادہ اس طرح کے جرائم کے مرتکب ہوتے ہیں۔ ماضی میں ایک تحقیق میں کہا گیا تھا کہ پرتشدد جرائم کرنیوالے مردوں کے بچے بھی عام بچوں کی نسبت 3.5 گنا زیادہ ایسا جرم کرسکتے ہیں۔
جنسی جرائم