گوجرانوالہ: راستہ نہ دینے کے تنازع پر خاتون کو ٹریکٹر سے کچل دیا، ٹانگیں ٹوٹ گئیں، گھر نذر آتش

سادھوکے+ گوجرانوالہ (نامہ نگار + اے این این) بااثر زمیندار اور اسکے بیٹے نے کھیت میں سے راستہ دینے کے تنازع پر خاتون پر تشدد کرنے کے ساتھ مکان پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی، خاتون کو ٹریکٹر سے کچل ڈالا جس سے اس کی دونوں ٹانگیں ٹوٹ گئیں، پولیس نے 7بااثر ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا ہے جبکہ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے واقعہ کا فوری نوٹس لیتے ہوئے آر پی او گوجرانوالہ سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ تھانہ صدر کامونکی پولیس کے مطابق یہ واقعہ نواحی گائوں دراجکے میں پیش آیا جہاں زمیندار جعفر حسین اور خاتون منظوراں بی بی کے درمیان کھیت میں سے راستہ دینے کا تنازع چلا آرہا تھا۔ گزشتہ رات زمیندار لقمان جعفر اپنے بیٹے اور مزارعوں کیساتھ آیا اور زبردستی کھیت سے راستہ بنانا شروع کر دیا اس دوران خاتون مافیہ بی بی نے مزاحمت کی تو زمیندار نے پہلے تشدد کیا اور پھر اسکے اوپر ٹریکٹر چڑھا دیا جس سے خاتون بری طرح زخمی ہوگئی۔ زمیندار نے زخمی خاتون کے گھر کوبھی جلا ڈالا۔ پولیس نے زمیندار کو گرفتار کرکے ٹریکٹر قبضہ میں لیکر کارروائی شروع کردی۔ ہسپتال ذرائع کے مطابق خاتون کی متعدد جگہوں سے ٹانگ ٹوٹ گئی ہے۔نامہ نگار کے مطابق اراضی کے دیرینہ تنازع پر ملزمان لقمان جعفر وغیرہ نے زبردستی ٹریکٹر مخالف زمیندار ناظر حسین کے کھیتوں میں داخل کرکے فصل تباہ کرنے کے علاوہ ڈیرہ بھی مسمار کردیا جبکہ اسی دوران ناظر حسین کی بیوی مافیہ بی بی کے منع کرنے پر اسے بھی انتہائی درندگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ٹریکٹر تلے کچل دیا جسے بعدازاں تشویشناک حالت کے پیش نظر ڈی ایچ کیو ہسپتال گوجرانوالہ پہنچادیا گیا ہے۔ صدر پولیس نے دوملزمان جعفر علی اور محمد علی کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ دیگر روپوش ملزمان کیلئے پولیس جگہ جگہ چھاپے مار رہی ہے۔ لاہور سے خصوصی رپورٹر کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے درامکے میں با اثر افراد کی جانب سے خاتو ن کوٹریکٹر تلے روندنے کے واقعے کا فوری نوٹس لیتے ہوئے آر پی او گوجرانوالہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی ہے کہ زخمی خاتون کو ہسپتال میں علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں اور خاتون پر ظالمانہ تشدد کے ذمہ داروں کے خلاف قانون کے مطابق سخت قانونی کارروائی کی جائے۔