کراچی، فائرنگ، پرتشدد واقعات میں ایک شخص ہلاک، ایک بھتہ خور بھی مارا گیا

 کراچی (نوائے وقت رپورٹ+ ایجنسیاں) کراچی کے مختلف علاقوں میں پولیس کارروائی کے دوران 44 سے زائد ملزمان کو گرفتار کر لیا جبکہ فائرنگ اور پرتشدد واقعات میں ایک شخص ہلاک اور ایک پولیس افسر  سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے۔کراچی کے علاقے پی آئی بی کالونی ، پرانی سبزی منڈی اور اطراف کے علاقوں میں پولیس کی جانب سے سرچ آپریشن کیا گیا۔ کارروائی کے دوران 2 ملزمان کو گرفتار کر کے اسلحہ برآمد کر لیا گیا جبکہ 30 مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لے لیا گیا ۔  ادھر اورنگی ٹاون گلشن ضیا میں پولیس مقابلے کے دوران ایک ڈاکو زخمی حالت میں گرفتار کر لیا گیا۔ دوسری جانب نیو کراچی شفیق موڑ کے قریب سے ایک شخص کی تشدد زدہ نعش ملی۔ لیاقت آباد، ایف سی ایریا میں مکان کے قریب فائرنگ سے یاسمین نامی خاتون زخمی ہوگئی۔ شارع فیصل ایف ٹی سی پل کے قریب نامعلوم افراد کی فائرنگ سے پولیس اہلکار شاہ نواز زخمی ہوگیا۔ دریں اثناء کراچی کے مختلف علاقوں میں پولیس کارروائی کے دوران ایک ملزم ہلاک اور ایک کو زخمی حالت میں گرفتار کرلیا گیا۔ لیاری کے علاقے کلری میں پولیس مقابلے کے دوران گینگ وار کا ایک کارندہ مارا گیا۔  ملزم کے قبضے سے اسلحہ اور دستی بم برآمد کر لئے گئے  اگر گلستان جوہر کراچی میں فائرنگ سے ریٹائرڈ ڈی ایس پی امان اللہ زخمی ہو گئے۔ انہیں ہسپتال داخل کرا دیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں کراچی میں انچارج سی ٹی ڈی خرم وارث کو عہدے سے ہٹا دیا گیا اور سی پی او آفس رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔آئی این پی کے مطابق محکمہ داخلہ سندھ کے کرائم مانیٹرنگ سیل کو جمعرات کو ملنے والی رپورٹ کے مطابق 5 ستمبر 2013 کو کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن کے آغاز سے مئی 2015 تک 20 ماہ کے دوران کراچی میں 2429افراد کو موت کے گھاٹ اتارا گیا جبکہ اس دوران175 افراد کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا گیا۔ رپورٹ کے مطابق بم دھماکوں اور دیگر واقعات میں 195 افراد زندگی کی بازی ہار گئے۔ علاوہ ازیں رینجرز نے کراچی میں مختلف علاقوں میں کارروائی میں کالعدم تنظیم کے دہشت گرد اور گینگ وار کے فلاح سمیت 14 ملزم گرفتار کرکے اسلحہ برآمد کر لیا۔