گورنر خیبر پی کے کی ترقیاتی منصوبوں کیلئے مالی سال کے آخر میں عجلت میں ادائیگیوں پر برہمی

پشاور(آن لائن)گورنرخیبرپی کے سردار مہتاب احمد خان نے مالی سال کے اختتام پر نئے ترقیاتی منصوبوں کے آغاز اور موقع پر ان منصوبوں پر مطلوبہ معیار اور مقدار کے بغیر عجلت میں ادائیگیوں کے طرزعمل پر برہمی کا اظہارکرتے ہوئے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ ادائیگی صرف اس صورت میںکی جائے جہاں موقع پر منظور شدہ معیار اور مقدار کے مطابق ترقیاتی منصوبوں پرکام موجود ہو۔ تمام قبائلی ایجنسیوں وفرنٹیرریجنز (ایف آرز )کے پولٹیکل ایجنٹوں اور قبائلی علاقوں میں قومی تعمیر سے متعلق محکموں اور اداروں کے سربراہان کو احکامات میں گورنر نے کہا کہ مالی سال یکم جولائی سے شروع ہوکر 30جون کو مکمل ہوتا ہے لیکن یہ عمومی طرزعمل دیکھنے میں آتا ہے کہ مالی سال کے بجٹ یا سالانہ ترقیاتی پروگرام میں رکھے جانے والے ترقیاتی منصوبوں پرمالی سال کی پہلی تین سہ ماہیوں میں کوئی کام نہیں کیا جاتا تاہم ان منصوبوں کے لئے مختص خطیر مالیت کے فنڈز کو ٹھکانے لگانے کے لئے مالی سال کے آخر میں ان نئے ترقیاتی منصوبوں پر کام کا آغاز کیا جاتا ہے یوں وقت کی کمی کی وجہ سے ان منصوبوں پر معمول کے مطابق کام ممکن نہیں ہوتا ۔