کاہنہ ،شرقپور ، فیروز والا، فیصل آباد میں 5 لڑکیوں، پاکپتن میں بچے سے زیادتی

کاہنہ  +شرقپور شریف + فیروز والا + فیصل آباد+ پاکپتن (نامہ نگاران+ نمائندہ خصوصی)  کاہنہ، شرقپور شریف، فیروزوالا فیصل آباد اور پاکپتن میں ذہنی معذور سمیت 5 لڑکیوں اور 5 سالہ بچے کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔کاہنہ کے علاقہ جیڈو گاؤں کے رہائشی لیاقت علی کی 14 سالہ بہن ذہنی معذور مافیا کے ساتھ محلے دار اوباش نوجوان جہانگیر نے زیادتی کر ڈالی۔ شرقپور کے نواحی گائوں راجیاں آرائیاں کا رہائشی خادم حسین کے گھر کی دیوار پھلانگ کر وقاص، اظہر شراب کے نشہ میں دھت ہو کر اندر داخل ہو گئے اور 16سالہ ثمینہ بی بی کو اٹھا کر کمرے میں لے گئے اور زبردستی ہوس کا نشانہ بناتے رہے۔ مقامی پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔ فیروز والا میں نواحی آبادی نین سکھ میں اوباش نوجوان نے گن پوائنٹ پر محنت کش کی جواں سالہ بیٹی کے ساتھ زیادتی کی جبکہ دوسرے واقعہ میں نوجوان نے اپنی سالی کے ساتھ زیادتی کی اور فرار ہو گئے۔ تھانہ فیکٹری ایریا کے علاقے مصطفی آباد (نین سکھ) میں نوجوان علی نامی نے گن پوائنٹ پر محنت کش ثناء اللہ کے گھر میں داخل ہو کر اسکی پندرہ سالہ بیٹی (ف) کے ساتھ زیادتی اور فرار ہو گیا۔ فیکٹری ایریا پولیس نے اس ضمن میں مقدمہ درج کر لیا ہے۔ نوجوان فلک شیر نے اپنی سالی (ن) کو گھر بلا کر اس کے ساتھ زبردستی زیادتی کی اور فرار ہو گیا۔ فیصل آباد میں چک نمبر 214 ر۔ب طارق آباد گلی نمبر 2کے جان سر مائیکل نے تھانہ مدینہ ٹائون میں مقدمہ درج کرواتے مؤقف اختیار کیا ملزموں چاند سلہریوں اور آفتاب مسیح نے میری ہمشیرہ 18سالہ افراء مائیکل کو اقبال مسیح کی بیٹھک میں لے جا کر زبردستی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ہے۔ پاک پتن میں گائوں بائیل گنج کے نور حسن کا پانچ سالہ بیٹا قربان علی گلی میں کھیل رہا تھا اسے نوجوان جمشید نے زبردستی قریبی فصل میں لے جا کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔