پنجگور: ایف سی کا آپریشن،10 شدت پسند جاں بحق،3 ٹھکانے،2 گاڑیاں تباہ

کوئٹہ+ پنجگور+ ڈیرہ بگٹی (بیورو رپورٹ+ نوائے وقت رپورٹ+ایجنسیاں) پنجگور میں جرائم پیشہ افراد کیخلاف ایف سی کے آپریشن کے دوران فائرنگ کے تبادلہ میں 10شدت پسند جاں بحق ہو گئے۔آپریشن کے دوران شرپسندوں کے 3 کیمپ اور 2گاڑیاں تباہ کر ددی گئیں۔ فائرنگ کے تبادلہ میں ایف سی کے 3 اہلکار بھی زخمی ہو گئے۔ تمام زخمیوں کو ہسپتال  منتقل کر دیا گیا۔ واقعہ کے بعد علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ تفصیلات کے مطابق پیر کو فرنیٹئر بلوچستان کے عملے نے پنجگور میں شدت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع پر سرچ آپریشن شروع کیا تو مسلح افراد نے اندھا دھند فائرنگ کر دی، جوابی کارروائی کے نتیجے میں 10شرپسند جاں بحق ہو گئے فائرنگ کے نتیجے میں تین اہلکار زخمی ہو گئے۔ فرنٹیئر کور بلوچستان کے ترجمان نے بتایا کہ ایف سی نے دور دراز پہاڑی علاقے میں سرچ آپریشن کیا۔ جاں بحق ہونے والے افراد کا تعلق کالعدم تنظیموں لشکر بلوچستان اور بلوچستان لبریشن فرنٹ سے ہے۔ علاو ہ ازیں کالعدم بلوچ ری پبلکن آرمی کے 2کمانڈرز نے ہتھیار ڈال دیئے ایف سی کے مطابق کمانڈرز کے 22 ساتھیوں نے بھی ہتھیار ڈالے ہیں کمانڈرز فورسز اور سرکاری املاک پر حملوں میں ملوث تھے۔ آئی جی ایف سی کے مطابق فراریوں کا ہتھیار ڈالنا خوش آئند ہے۔ علاوہ ازیں صوبائی وزیر داخلہ اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما میر سرفراز بگٹی نے کہا ہے کہ حکومت ہر جگہ اپنی رٹ قائم کریگی اگر کسی نے امن و امان کو خراب کرنے کی کوشش کی تو اس کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی جائیگی۔ بلوچستان میں فراری کیمپ موجود ہیں اور کالعدم تنظیمیں جن میں بی ایل اے، بی آر اے ، لشکر بلوچستان، بی ایل ایف، یو بی اے، اس وقت بلوچستان کے مختلف علاقوں  میں کام کررہی ہے ہم ہر صورت میں امن وامان برقرار رکھیں گے۔ وہ گزشتہ روز ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔  انہوں نے کہا کہ کوئی غلط فہمی میں نہ رہے کہ وہ حکومت کی رٹ کو چیلنج کر سکیں گا۔ ادھر کوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کرکے ایک شخص کو ہلاک کر دیا جبکہ قلعہ عبداللہ کے علاقے میں انٹی نارکوٹکس فورس، ایف سی اور لیویز نے 250ایکڑ رقبے پر کاشت افیون کی فصل تلف کر دی۔ علاوہ ازیں نوشکی کے علاقے میں نامعلوم افراد نے ریلوے ٹریک کو دھماکہ سے اڑا دیا۔ پیر کی رات نوشکی کے علاقے بھٹو لانڈھی کے مقام پر نامعلوم افراد نے کوئٹہ سے تفتان جانے والی ریلوے لائن کے ساتھ دھماکہ خیز مواد نصب کر رکھا تھا جو زوردار دھماکے سے پھٹ گیا، ٹریک کا 3فٹ کا حصہ تباہ ہو گیا تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ ادھر جعفر آباد کے علاقے سے نامعلوم مسلح افراد نے 3بھائیوں کو اغوا کر لیا۔