کوئٹہ: فائرنگ سے دو افراد جاں بحق، خودکش دھماکوں کے ماسٹر مائنڈ سمیت 3 گرفتار

کوئٹہ (بیورو رپورٹ) سعید خان روڈ کوئٹہ میں فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق ہوگئے پولیس کے مطابق نامعلوم افراد نے دکان پر فائرنگ کی۔ علاوہ ازیں نواحی علاقے کچلاک میں سیکورٹی فورسز نے کارروائی کرتے ہوئے خودکش دھماکوں کے ماسٹر مائند سمیت تین دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا،سیکورٹی ذرائع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ وزیرستان سے آنے والے تین دہشت گرد کچلاک کے نواحی علاقے کلی ناصران میں موجود ہیں جس پر کارروائی کرتے ہوئے تینوں دہشت گردوںکو گرفتار کرلیا گیا ،گرفتار ہونے والے دہشت گردوں میں سے ایک کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ وہ خودکش دھماکوں کا ماسٹر مائنڈ ہے ،اور چند روز قبل وہ وزیرستان سے کچلاک منتقل ہوا تھا ،تینوں دہشت گردوں کے نام صیغہ راز میں رکھے جارہے ہیں گرفتاری کے بعد تینوں کو نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔ ایک اور واقعہ میں قلعہ سیف اللہ میں سکیورٹی فورسز نے تخریب کاری کی کوشش ناکام بناتے ہوئے افغان مہاجر کو گرفتار کر کے بھاری تعداد میں اسلحہ برآمد کرلیا۔ جمعہ کو خفیہ اداروں کی رپورٹ پر سکیورٹی فورسز نے قلعہ سیف اللہ شہر میں ایک گھر پر چھاپہ مار کر افغان مہاجر محمد ابراہیم کو گرفتار کرکے گھر سے 2 راکٹ لانچر، 3 ایل ایم جی، 5 پسٹل، 3 پیٹی کارتوس اور بھاری تعداد دہشتگردی میں استعمال ہونے والا سامان قبضے میں لے لیا۔ضلع قلات میں منگچر کے مقام پر آئل ٹینکر پر نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کرتے ہوئے آئل ٹینکر کو نذر آتش کردیا جبکہ ڈرائیور زخمی ہوگیا۔ لیویز ذرائع کے مطابق کراچی سے کوئٹہ جانے والے آئل ٹینکر کو نامعلوم مسلح افراد نے منگچر بازار کے قریب نشانہ بنایا۔ فائرنگ کے نتیجے میں خوشاب کا رہائشی ڈرائیور محمد رمضان زخمی ہوگیا جبکہ ٹینکر کو آگ لگادی گئی۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی متعلقہ انتظامیہ جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔ دریں اثناءکوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد نے سیکشن آفیسر کو اغواءکرلیا۔ گزشتہ روز کوئٹہ سول سیکرٹریٹ سٹینڈ سے نامعلوم مسلح افراد نے سیکشن آفیسر ہیلتھ جنت علی کو اغواءکرلیا اور نامعلوم مقام کی طرف فرار ہوگئے۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے اغواءہونے والے شخص اور ملزمان کی تلاش شروع کردی۔