پشاور میں جھڑپ‘ طالبان کمانڈر روح الامین‘ عدنان زہرہ اور ایک سیکورٹی اہلکار جاں بحق

پشاور (نوائے وقت نیوز+ آئی این پی) پشاور میں پولیس اور سکیورٹی فورسز کے مشترکہ آپریشن کے دوران جھڑپ میں کالعدم تحریک طالبان کے 2 کمانڈر روح الدین اور عدنان عرف ہریرہ اور ایک پولیس اہلکار جاں بحق ہوگیا۔ آپریشن کے بعد پورے علاقے میں امن لشکر کے رضاکار اور پولیس تعینات کر دی گئی۔ گزشتہ روز پولیس اور سکیورٹی فورسز نے پشاور کے علاقے متنی میں مزاحمت کاروں کی موجودگی کی اطلاع پر کیا۔ اس دوران جھڑپ کے دوران کالعدم تحریک طالبان کے 2 کمانڈر جبکہ ایک پولیس اہلکار بھی جاںبحق ہوا۔ ایس ایس پی آپریشن، عمران شاہد کے مطابق جاں بحق ہونے والا طالبان کمانڈر روح الامین کا تعلق خیبر ایجنسی سے تھا اور طالبان کمانڈر چنگریز خان کا رشتہ دار ہے۔ عسکریت پسندوں نے پولیس پر حملہ کرنے کی کوشش کی تو پولیس نے ان کا پیچھا کیا جس پر وہ ایک گھر میں مورچہ بند ہوگئے۔ پولیس اور سیکیورٹی فورسز نے مشترکہ آپریشن کے دوران گھر کومحاصرے میں لے لیا۔ دو گھنٹے تک پولیس اور عسکریت پسندوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوتا رہا۔ اس دوران شدت پسندوں کی جانب سے دستی بموں کا بھی استعمال ہوا تاہم دو گھنٹے کے آپریشن کے بعد دونوں کمانڈر مارے گئے۔ دریں اثناءعلاقہ سے 4 انسانی سر برآمد ہوئے ہیں۔ بی بی سی کے مطابق مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ جمعرات کی صبح علاقے میں موبائل ٹیلی فون سروس معطل کر دی گئی اور لوگ گھروں کے اندر محصور ہو گئے۔
پشاور/ سرچ آپریشن