امریکہ افغانستان میں موجود حقیقی طالبان سے مذاکرات کر رہا ہے: حافظ حسین

امریکہ افغانستان میں موجود حقیقی طالبان سے مذاکرات کر رہا ہے: حافظ حسین

لوٹن (آئی این پی) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی رہنما حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ حقیقی طالبان تو افغانستان میں ہی ہیں جن سے امریکہ مذاکرات کررہا ہے، پاکستانی قبائلی علاقوں میں مختلف مزاحمت کار گروپس طالبان کے ٹریڈ مارک کو استعمال کررہے ہیں، قطر میں طالبان سے مذاکرات کا اونٹ اگر کسی کروٹ بیٹھے گا تو اس کے اثرات پورے خطے میں مرتب ہوں گے لیکن کاش امریکہ طالبان سے یہ مذاکرات طاقت کے استعمال سے پہلے ہی شروع کردیتا تو پاکستان بالخصوص اور خطے میں اتنے بڑے پیمانے پر تباہی اور نقصانات نہ ہوتے۔ وہ گذشتہ روز جمعیت علمائے اسلام برطانیہ کے ایڈیشنل سیکرٹری جنرل مفتی خالد محمود کی رہائش گاہ پر مختلف کمیونٹی رہنماﺅں عبدالمجید، محمد آصف، عبدالمتین، شیخ محمد زبیر، مولانا سعید اور مولانا قمر سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں جاری 13سالہ جنگ میں سب سے زیادہ نقصان پاکستان کا ہی ہوا ہے جس میں بدامنی، دھماکے، ٹارگٹ کلنگ اور اقتصادی بدحالی شامل ہے۔