اوکاڑہ، وزیراعظم کی قرضہ کے درخواست دہندگان سے ہلکی پھلکی گفتگو، گارنٹر کا گریڈ بھول گئے ،20 لاکھ سے ویگن خریدنا چاہتی ہوں: رابعہ اپنا سکول بنانا چاہتی ہوں:ریحانہ

اوکاڑہ (آئی این پی) وزیراعظم نوازشریف نے قرضہ سکیم  کیلئے درخواستیں دینے والے نوجوانوں سے ملاقات میں انکے مستقبل کے عزائم ، درخواست دہندگان کے منصوبوں سمیت دیگر ایشوز پر ہلکی پھلکی خوشگوار گفتگو کی۔ ایک موقع پر وزیراعظم  قرضہ لینے کیلئے سرکاری ملازم گارنٹر کا گریڈ بھول گئے اور 15کی بجائے گریڈ 18 کے افسر کی گارنٹی کا بتاتے رہے، وزیراعظم کو جب اس بارے میں نشاندہی کی گئی تو مسکرا کر کہنے لگے ’’ اوہ  میں تو بھول گیا تھا‘‘۔ وزیراعظم کی اوکاڑہ آمد پر اس حوالے سے خصوصی تقریب ہوئی جس میں قرضہ سکیم کیلئے درخواستیں دینے والے سینکڑوں نوجوان لڑکے لڑکیوں نے شرکت کی۔ تقریب میں اوکاڑہ کی رہائشی رابعہ نامی لڑکی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے پوچھا کہ کتنے قرضہ کیلئے اپلائی کیا ہے اور کیا کام کرنا چاہتی ہیں جس پر رابعہ نے بتایا کہ 20 لاکھ کیلئے اپلائی کیا ہے ۔ ویگن خریدنا چاہتی ہیں تاکہ آمدن بڑھ سکے ۔ میرے بھائی فیکٹری میں 7ہزار روپے پر کام کرتے ہیں ویگن خریدنے کے بعد خود گاڑی چلائیں گے ۔ وزیراعظم نے پوچھا کہ کتنے عرصہ میں قرضہ واپس کریں گی تو رابعہ نے کہا کہ یہ تو آمدن پر منحصر ہے، کارروبار کیسے چلتا ہے، یہ پہلے سے کچھ نہیں کہہ سکتے ۔ جب وزیراعظم نے مشکلات کا پوچھا تو رابعہ نے کہا کہ میرے پاس کوئی گارنٹی نہیں، صرف گھر ہمارا ذاتی ہے جس پر نواز شریف نے کہا کہ اپنے گھر کو ضمانت بناکر قرضہ حاصل کرو۔ اوکاڑہ کے نواحی گائوں کی ریحانہ ماسٹر ڈگری ہولڈر نے کہا کہ میں اپنے گائوں میں سکول بنانا چاہتی ہوں، میرے علاقے میں کوئی سکول نہیں۔ مجھے 10 سے 12 لاکھ روپے کی ضرورت ہے۔  میں نے درخواست دی ہے لیکن گارنٹی نہیں مل رہی تھی، اب میرے رشتہ داروں میں کسی کی گارنٹی مل جائیگی۔ میں کم سے کم 10 افراد کے سٹاف اور 10 ہزار روپے تنخواہ سے کام سٹارٹ کرنا چاہتی ہوں۔ وزیراعظم نے عدنان رفیق نامی نوجوان کو بلایا تو اس نے کہا میرے پاس 3 بھینسیں ہیں، میں مزید 10 سے 12 بھینسیں خرید کر کاروبار بڑھانا چاہتا ہوں میں نے 20 لاکھ کیلئے درخواست دی ہے، میں  4 ملازم رکھوں گا اور 50 سے 70 ہزار روپے آمدن متوقع ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ملازم کی تعداد بڑھا دو جس پر نوجوان نے کہا کہ بھینسیں کم ہیں تو ملازم بھی توکم ہی ہوں گے جس پر ہال میں قہقہہ گونج اٹھا۔ وزیراعظم محمد نوازشریف اوکاڑہ میں قرضہ سکیم کی تقریب میں قرضہ کیلئے درخواست دہندہ نوجوان سے گفتگو کے دوران تقریب میں شریک ہونے والے دیگر نوجوانوں کو خاموش کراتے ہوئے تنبیہ کرتے رہے۔