جہلم: باپ نے ڈنڈے سے بیٹی، جڑانوالہ، نوجوان نے ٹھڈے مارکر بچہ قتل کردیا

جہلم+ جڑانوالہ (نامہ نگاران)  غیرت کے نام پر باپ نے سوٹوں کے پے در پے وار کر کے بیٹی کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ پولیس کے مطابق زمرد حسین سکنہ ڈھوک پوٹھہ داخلی پھڈیال نے درخواست دی جس میں موقف اختیار کیا کہ میں پولیس فائونڈیشن اسلام آباد میں ٹھیکیداری کرتا ہوں مجھے فون پر اطلاع ملی کے گھر میں لڑائی جھگڑا ہے آپ فوراً گھر پہنچ آئو اس اطلاع پر میں فوراً گھر آیا میرے بھائیوں زبیر حسین، نجابت حسین نے بتایا کہ رات کو ہماری بہن نغمہ شاہین گھر سے کہیں چلی گئی جب واپس گھر آئی تو ہمارے والد محمد صفدر نے سوٹوں کے وار کر کے اس کو قتل کر دیا تھانہ ڈومیلی پولیس نے محمد صفدر کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کر کے کارروائی شروع کر دی۔ مزید برآں جڑانوالہ میں بچوں کی لڑائی پر نوجوان محمد مظہر نے بچے کو ٹھڈے مار مار کر قتل کر دیا۔ واقعات کے مطابق 10سالہ وسیم علی ولد گوہر علی اپنے ہم عمر بچوں کے ساتھ کھیل رہا تھا کہ ایک بچے سے جھگڑا ہو گیا جس سے طیش میں آکر مظہر نے وسیم کو ٹھڈے مار مار کر قتل کر دیا اور فرار ہو گیا۔ مقتول کے ورثاء کا کہنا ہے کہ قاتل نے فائرنگ کی اور معصوم بچے کو ٹھنڈے مارے جس سے بچہ ہلاک ہوگیا۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم کی تلاش شروع کردی ہے۔