واپڈا کی مجوزہ نجکاری کیخلاف لاہور سمیت کئی شہروں میں ملازمین کا احتجاج، دھرنے دیئے

واپڈا کی مجوزہ نجکاری کیخلاف لاہور سمیت کئی شہروں میں ملازمین کا احتجاج، دھرنے دیئے

لاہور (کامرس رپورٹر + نامہ نگاران) واپڈا کی مجوزہ نجکاری کے خلاف لاہور سمیت کئی شہروں میں ملازمین نے احتجاج کیا، دھرنے دیئے۔ہزاروں کارکنوں نے آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک ورکرز یونین سی بی اے کے زیراہتمام ملک بھر میں احتجاجی ریلیاں و جلوس نکال کر یوم احتجاج منایا اور حکومت سے پْرزور مطالبہ کیا وہ وفاقی بجٹ میں ملک کے غریب عوام ، محنت کشوں اور کسانوں کی فلاح وبہبود کے لئے جہالت اور غربت ، اقتصادی و سماجی ناانصافیوں کے خاتمہ کیلئے دوررس اصلاحات کا نفاذ کرے۔ محنت کشوں اور ملازمین کی تنخواہوں ، اْجرتوں اور بڑھاپے کی پنشن اور ہائوس رینٹ الائونس میں کم ازکم پچاس فیصد اضافہ کرے، ریٹائرمنٹ پر صنعتی کارکنوں کو مفت طبی سہولت بحال کی جائے، بجلی، ریلوے، پی آئی اے، آئل اینڈگیس، سول ایویشن، نیشنل بینک آف پاکستان میں انتظامی اصلاحات کا نفاذ کرکے سیاسی مداخلت روک کر ان اداروںکو آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کے دبائو پر نجکاری کے حوالے کرنے کی بجائے ان کی کارکردگی میں اضافہ کرے، محکمہ بجلی میں نجی ارکان بورڈ آف ڈائریکٹر کو بغیر کسی سرمایہ کاری کے مالک بنانے کی بجائے اس کی بہتر کارکردگی کے لئے انہیں واپڈا یا قومی ادارہ پیپکو کے مکمل کنٹرول میں دیا جائے اور بجلی کی کمپنیوں کو آئی ایم ایف کے دبائو پر سیٹھوں کے حوالے نہ کیا جائے اس سے بین الصوبائی تنازعات بھی پیدا ہوں گے جبکہ لاہور میں ہزاروں محنت کشوں نے یونین کے زیراہتمام پریس کلب چوک میں بزرگ مزدور رہنما خورشید احمد مرکزی جنرل سیکرٹری کے تحت زبردست احتجاجی ریلی نکالی کی۔ ماہر قانون عابد حسن منٹو سابق صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے بھی خطاب کرتے محنت کشوں کی قومی مفاد عامہ کے اداروں بمعہ محکمہ بجلی کی مجوزہ نجکاری کے خلاف جدوجہد کی بھرپور حمایت کی بعدازاں ریلی کو ساجد کاظمی، رانا شکور، مظفر متین، حاجی محمد یونس، چودھری مقصود ، محمد جاوید ، رانا اکرم، اْسامہ طارق ودیگر نمائندگان یونین نے بھی خطاب کیا اجلا س میں ایک قرار داد کے ذریعے اپیل کی گئی وہ محنت کشوں کی جدوجہد کی حمایت کرتے ہوئے ملک میں سرکاری شعبے میں سستے ہائیڈل وگیس کے تھرمل بجلی گھروں کی تعمیر اور بجلی کی مہنگائی ختم کرانے اور بجلی کی کمپنیوں کی مجوزہ نجکاری کے خلاف جدوجہد کی حمایت کریں۔ حالیہ اسلام آباد میں اپنے حقوق کے لئے پْر امن جلوس کے شرکاء پر پولیس کے لاٹھی چارج کی پْر زور مذمت کی گئی اور وزیراعظم سے مطالبہ کیاگیا وہ محنت کشوں سے بات چیت کرکے نجکاری کے مسئلہ کا حل نکالیں اور پْر امن محنت کشوں پر تشدد اور لاٹھی چارج کرنے والوں کے خلاف ایکشن لیں۔ مستونگ میں معصوم شہریوں کے قتل عام پر گہرے رنج وغم کا اظہار کرتے اسے انسانیت کے خلاف جرم قرار دیا۔ علاوہ ازیں فیصل آباد، میانوالی ، شور کوٹ، پاکپتن، بہاولپور، جھنگ، ڈسکہ، وزیر آباد میں ملازمین نے دفاتر کی تالا بندی کی نعرے لگائے۔ فیصل آباد میں فیسکو کے ہزاروں ملازمین نے فیسکو ہیڈ کوارٹر پر دھرنا دیا، دھرنے کی قیادت ریجنل سیکرٹری چودھری سرفراز احمد ہندل اور ریجنل چیئرمین رانا غلام جعفر نے کی۔