شمالی وزیرستان: بمباری ، بنوں میں جھڑپ،12 دہشت گرد ہلاک، ایک اہلکار شہید، صدر ممنون کے بیٹے پر حملے کا ماسٹر مائنڈ گرفتار

شمالی وزیرستان، بنوں (آن لائن+صباح نیوز) شمالی وزیرستان میں سکیورٹی فورسز کی زمینی و فضائی کارروائی اور بنوں میں چیک پوسٹ حملے میں 12 دہشت گرد ہلاک اور 13 زخمی ہوگئے جبکہ فائرنگ کے نتیجے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید ہوگیا جبکہ حب میں صدر ممنون حسین کے بیٹے پر حملے کا ماسٹر مائنڈ ساتھی سمیت گرفتار کر لیا گیا۔ سکیورٹی فورسز نے دتہ خیل میں شیرانی مداخل کے مقام پر جیٹ طیاروں کی مدد سے دہشت گردوں کے خفیہ ٹھکانوں پر شدید بمباری اور شیلنگ کی جس کے نتیجے میں 9 دہشت گرد ہلاک ہوگئے اور 13 زخمی ہوئے جنہیں حراست میں لے لیا گیا۔ پولیٹیکل حکام کے مطابق 2 درجن سے زائد دہشت گرد ایک خفیہ ٹھکانے میں دہشت گردانہ کارروائی کیلئے منصوبہ بندی کررہے تھے کہ پاک فوج نے کارروائی کر کے ان دہشت گردانہ عزائم کو ناکام بنا دیا۔ کارروائی کے دوران 5خفیہ ٹھکانے مکمل طور پر تباہ ہوگئے‘ دہشت گردوں کے زیر استعمال بھاری اسلحہ بھی قبضہ میں لے لیا گیا۔ سکیورٹی حکام کے مطابق ہلاک اور زخمی دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم تحریک طالبان اور لشکر اسلام سے تھا ۔دوسری جانب بنوں کے علاقے ایف آر میں دہشت گردوں نے چیک پوسٹ پر حملہ کر دیا اور شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کے نتیجے میں 3 دہشت گرد ہلاک اور متعدد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ فائرنگ کے تبادلے میں ایک سکیورٹی اہلکار شہید ہوگیا، واقعہ کے بعد بھاری تعداد میں سکیورٹی اہلکار جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور علاقے کو گھیرے میں لیکر سرچ آپریشن شروع کر دیا جنوبی وزیرستان کے علاقے شکئی گائوں میں پولیٹیکل محرر پر نامعلوم افراد نے حملہ کردیا تاہم اس حملے میں پولیٹیکل محرر بال بال بچ گئے۔ ادھر فرنٹیئر کور نے بلوچستان کے علاقہ حب سے کالعدم تنظیم کے کمانڈر کو ساتھی سمیت گرفتار کر لیا۔ کالعدم تنظیم کے کمانڈر صوات خان مری کو ساتھی سمیت گرفتار کیا گیا۔ ایف سی ترجمان کے مطابق گرفتار دہشت گرد صدر مملکت ممنون حسین کے بیٹے سلمان کے قافلے پر 24مئی کو ہونے والے بم حملے کا ماسٹر مائنڈ ہے جبکہ اٹک فیکٹری کے آٹھ مزدوروں کے قتل میں بھی ملوث تھا۔ دریں اثناء ٹانک میں خواتین کے شاپنگ مال کو بم دھماکے سے اڑا دیا گیا۔ 40 لاکھ روپے کا سامان جل کر خاکستر ہو گیا۔ سٹی پولیس موبائل بال بال بچ گئی۔ درجن بھر دکانوں اور قریبی گھروں کو شدید نقصان پہنچا، علاقہ میں شدید خوف و ہراس پھیل گیا۔ ادھر کوہاٹ استرزئی میں گھر پر دستی بم حملے اور فائرنگ سے مکان کے مین گیٹ کو جزوی نقصان پہنچا۔ واقعہ میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ دریں اثناء پولیس ذرائع کے مطابق گومل میں گذشتہ روز کوٹ نواز کے مقام پر کرکٹ میچ جاری تھا کہ اسی دوران موٹرسائیکل پر سوار مسلح افراد آئے اور نور محمد نامی مقامی شخص کو اٹھا کر لے گئے۔ ادھر پولیس نے سوات میں سرچ آپریشن کے دوران 119 اشتہاری ملزم گرفتار کر لئے۔ ان سے اسلحہ برآمد کیا گیا ہے۔دریں اثناء تخت بھائی مردان میں کار پر نامعلوم افراد کی فائرنگ سے دو افراد جاں بحق ہوگئے۔ جبکہ سربند کے علاقے سے بلال اور غلام حبیب نام کے دو دہشتگرد گرفتار کرکے اسلحہ برآمد کر لیا گیا، دونوں کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے۔ دریں اثناء منگوچر میں فائرنگ میں ایک شخص جاں بحق ہو گیا۔