ڈی آئی خان میں لکھ پتی فقیر نوٹوں‘سکوں کی بوریاں چھوڑ کر مر گیا

ڈی آئی خان میں لکھ پتی فقیر نوٹوں‘سکوں کی بوریاں چھوڑ کر مر گیا


ڈی آئی خان (نوائے وقت رپورٹ) ڈیرہ اسماعیل خان کا فقیر مر گیا۔ اپنے پیچھے کھوکھے میں لاکھوں کی نقدی اور ریزگاری کی بوریاں چھوڑ گیا۔ کنجوس فقیر نے پیسہ خود پر نہیں لگایا، کوئی والی وارث فقیر بھی سامنے نہیں آیا۔ حکومت نے پیسہ بحق سرکار ضبط کر لیا۔ نجی ٹی وی کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان کا بھکاری محمد حسین 80 سال کی عمر میں انتقال کر گیا تو میونسپل کمیٹی کے عملے نے لاوارث قرار دیکر اسے دفن کر دیا۔ ڈیڑھ ماہ بعد کمیٹی کے عملے نے لکڑی سے بنے ہوئے کھوکھے کو کھولا تو وہاں سے لاکھوں روپے اور ریزگاری برآمد ہوئی جو بوریوں میں بند تھے۔ میونسپل کمیٹی کا عملہ رقم کئی گھنٹوں تک گنتا رہا۔ چیف میونسپل آفیسر منیر احمد چغتائی نے بتایا فقیر کا کوئی وارث سامنے نہیں آیا، ہم نے اس کے بھانجوں کو اطلاع دی تو انہوں نے وارث بننے سے انکار کر دیا جس کی بنیاد پر اسے لاوارث قرار دیکر دفنا دیا گیا۔ فقیر محمد حسین کی ایسی زندگی پر سب حیران ہیں کہ کیا وہ اپنے لئے یا اپنوں کیلئے، میونسپل کمیٹی کیلئے یا حکومتی خزانے کیلئے یہ بھیک مانگ رہا تھا یا عادتاً بھیک مانگتا تھا۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ لاکھوں کے انکشاف کے بعد لاوارث کے کتنے وارث پیدا ہوتے ہیں۔
لکھ پتی فقیر