چاکلیٹ، بسکٹ چوری کرنے کا الزام سابق صدر فیروزوالا بار کے اہلخانہ کا 10 سالہ ملازم پر تشدد، جسم جلا ڈالا

مریدکے (نامہ نگار) فیروز والہ بار کے سابق صدر ا سینئر وکیل کے خاندان نے دس سالہ ملازمہ پر تشدد کر کے اس کا جسم جلا ڈالا۔ دس سالہ لڑکی صبا دختر جہانگیر نے الزام عائد کیا ہے کہ وہ آصف بشیر مرزا کے گھر پر کام کرتی تھی اور گھر سے چاکلیٹ اور بسکٹ چوری کرنے کے الزام میں اس کی اہلیہ اور بیٹی نے نہ صرف اس پر بری طرح تشدد کیا بلکہ گرم فرائی پان سے اس کا جسم بھی جھلسا دیا۔ اس نے مزید کہا کہ میرے والدین نے 70 ہزار روپے ادا کر کے رہائی حاصل کی ہے۔ اے ایس پی سرکل مریدکے عرفان سموں نے لڑکی کے گھر پہنچ کر اس کا بیان ریکارڈ کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔ آصف مرزا ایڈووکیٹ نے مو¿قف اختیار کیا کہ صبا نامی کوئی لڑکی اس کی ملازمہ نہیں رہی اور نہ ہی اسے اس کا تشدد کا کوئی علم ہے۔ انہوں نے کہا کہ چند افراد انہیں سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔