بحرالکاہل عبور کرنے کیلئے روانہ سولر امپلس کو خراب موسم کے باعث جاپان میں اتار لیا گیا

 بحرالکاہل عبور کرنے کیلئے روانہ سولر امپلس کو خراب موسم کے باعث جاپان میں اتار لیا گیا

ٹوکیو (بی بی سی اردو) بغیر ایندھن کے شمسی توانائی سے چلنے والے طیارے سولر امپلس کی بحرالکاہل کو عبور کرنے کی کوشش کو ترک کرنا پڑا ہے۔ خراب موسم نے طیارے سولر امپلس کو اتارنے کیلئے جاپان جانے پر مجبور کردیا۔ ہفتہ کو بحرالکاہل عبور کرنے کیلئے اڑنے والے اس طیارے کو سوئیٹزرلینڈ کے پائلٹ چین سے امریکہ لے جاتے ہوئے فضا میں 36 گھنٹے تک پرواز کرتے رہے جبکہ ایک اندازے کے مطابق چین سے امریکی ریاست ہوائی کے اس سفر میں وہ چھ دنوں تک پرواز کرنے والے تھے۔ اب سولر امپلس کی ٹیم جاپان میں موسم کے اچھے ہونے اور صاف آسمان کا انتظار کریگی۔موناکو میں کنٹرول روم سے طیارے کی پرواز پر نظر رکھنے والے پائلٹ برٹرینڈ پیکارڈ نے کہا ہمارا تحفظ ہماری ترجیح ہے۔ تاکہ پھر سے بحرالکاہل کو عبور کرنے کی کوشش کی جائے۔ موناکو میں کنٹرول روم سے اس طیارے کی پرواز پر نظر رکھنے والے پائلٹ برٹرینڈ پیکارڈ نے کہا ہم لوگ احمق جانباز نہیں بلکہ ایکسپلورر ہیں اور ہمارے لئے ہمارا تحفظ ہماری ترجیحات میں پہلے مقام پر ہے۔