امریکہ بھارت کے ساتھ مل کر پاکستان کو میدان جنگ بنانے کی تیاری کررہا ہے: حافظ سعید

مظفرگڑھ+ ملتان (نامہ نگار +نوائے وقت رپورٹ) امیر جماعت الدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ بھارت‘ امریکہ اور ان کے اتحادی پاکستان کو نقصان پہنچانے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے لیکن یہ اب 1971 والا ملک نہیں۔ پاکستان کے ایٹمی قوت بننے کی وجہ سے بھارت پاکستان کی جانب میلی نگاہ نہیں ڈال سکتا۔ وہ گزشتہ روز جماعتہ الدعوۃ مظفرگڑھ کے زیر اہتمام جامعہ محمدیہ جھنگ موڑ میں تکبیر کانفرنس سے خطاب کررہے تھے جبکہ اس موقع پر ضلع بھر سے جماعۃ الدعوۃ کے ہزاروں کارکنان تکبیر کانفرنس میں شریک ہوئے۔ حافظ محمد سعید نے خطاب میں کہا کہ امریکہ‘ بھارت اور اسرائیل پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو نقصانات سے دوچار کرنے کی خوفناک منصوبہ بندیاں کر رہے ہیں۔ روس کے ٹکڑوں میں تقسیم ہونے پر اﷲ تعالیٰ نے پاکستان کو ایٹمی قوت سے نوازا‘ افغانستان میں امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی شکست سے کشمیر آزاد ہو گا۔ بھارت میں بسنے والے 30 کروڑ مسلمان دو قومی نظریہ کی بنیاد پر متحد ہوں گے پاکستان صحیح معنوں میں اسلامی پاکستان بنے گا اور پورے عالم اسلام کی قیادت کرے گا۔ علاوہ ازیں حافظ سعید نے مزید کہا کہ نریندر مودی کا حکومت میں آنا بھارت کیلئے زیادہ خطرناک ہے۔ وزیراعظم کو بھارت نہ جانے کا مشورہ دیا تھا۔ ملتان میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت، بنگلہ دیش دونوں پاکستان مخالف ہیں ملک میں قیام امن کیلئے اتحاد کی اشد ضرورت ہے۔ امریکہ بھارت کے ساتھ مل کر پاکستان کو میدان جنگ بنانے کی تیاری کررہا ہے۔ پاکستان میں فرقہ واریت اور لسانی تشدد ان کے مشترکہ ایجنڈے ہیں۔ ملک کے دفاع کیلئے تمام جماعتوں کے ساتھ مل کر وسیع اتحاد بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔ مودی کو سازش کے تحت لایا گیا۔ اس سے پاکستان کیلئے نرم رویے کی امید نہیں۔