بلوچستان میں 2015ء کا پہلا پولیو کیس سامنے آگیا عالمی اداروں کا پاکستان کو ماہرین دینے سے انکار

خاران+ نیویارک (آئی این پی+ نوائے وقت رپورٹ) بلوچستان کے ضلع خاران میں سال 2015ء کا پولیو کا پہلا کیس سامنے آگیا۔ برامچہ میں 2 سالہ شفیع پولیو وائرس کا شکار ہوگیا۔ شفیع کو 2013ء میں پولیو کے قطرے پلائے گئے تھے تاہم اسکے باوجود وہ پولیو وائرس کا شکار ہوگیا۔ مزید برآں نوائے وقت رپورٹ کے مطابق عالمی اداروں نے پاکستان کو انسداد پولیو ماہرین دینے سے انکار کردیا۔ انسداد پولیو ماہرین ایمرجنسی آپریشن سیل کیلئے مانگے گئے تھے۔ ماہرین ڈبلیو ایچ او اور یونیسف سے طلب کئے گئے۔ ڈبلیو ایچ او، یونیسف کو ڈاکٹر الطاف بوسن کے تقرر پر تحفظات ہیں۔ الطاف بوسن کو سیل کا سربراہ بنانے پر عالمی اداروں نے انکار کیا۔