مشرف کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں، متحدہ ہی سہارا دے سکتی ہے: حافظ حسین

مشرف کا کوئی سیاسی مستقبل نہیں، متحدہ ہی سہارا دے سکتی ہے: حافظ حسین

دینہ (نامہ نگار) جمعیت علماءاسلام (ف) کے مرکزی رہنما حافظ حسین احمد نے کہا ہے آنے والے الیکشن انتہائی اہمیت کے حامل ہیں، قوم برادریوں سے ہٹ کر ووٹ دے بصورت دیگر کولہو کے بیل کی طرح ساری زندگی گزرے گی، اگر شفاف الیکشن نہ ہوئے تو ملک تباہ ہو جائے گا۔دہشت گردی ہمارا سب سے بڑا حساس مسئلہ بن چکا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز الجامعتہ الحسینیہ منگلا روڈ نکودر میں قاری خالق داد عثمان کے ہمراہ ایک اجتماع اور پریس کانفرنس میں کیا۔ انہوں نے کہا سابق حکمرانوں کی بے شرمی کی انتہا دیکھیں ملک بر باد کر کے بھی ذرا برابر شرمسار نہیں۔ نگران حکومت پر بہت سی ذمہ داریاں آن پڑی ہیں۔ بلوچستان کا امن بحال کرنے کے لئے فوری طور فوج کو باہر نکالا جائے، پہاڑوں پر رہنے والوں کو جمہوری دائرہ کار لایا جائے۔ آج ہم سب کا نعرہ اسلام زندہ باد ہونا چاہیے۔ تحریک انصاف سونامی نہیں بلکہ اس میں ”سو نامی گرامی“ لوگ شامل ہوئے اور یہ نامی گرامی ملک میں جو انقلاب لائیں گے وہ قوم اچھی طرح جانتی ہے۔مشرف کا اس ملک میں کوئی سیاسی مستقبل نہیں۔ ایم کیو ایم ہی اسے سہارا دے سکتی ہے۔